Categories
Breaking news

یورپ میں آپریشن، غیرقانونی اسلحہ، منشیات اور نقدی سمیت مختلف اشیا برآمد، 24 افراد گرفتار

ڈبلن( معراج عابد) یورپی لا انفورسمنٹاداروں کا بڑے پیمانے پر مختلف جرائم پیشہ گروہوں کے خلاف کامیاب آپریشن جس کے نتجے میں بھاری مقدار میں غیر قانونی اسلحہ، 80 ملین یورو مالیت کی 2 ہزار 31 ٹن غیر قانونی کیڑے مارادویات، منشیات اور ہزار سے زیادہ کیش قبضہ میں لے لیا گیا 24 افراد گرفتار کرکے تفتیش شروع کردی گئی ۔ تفصیلات کے مطابق پولش بارڈر گارڈ نے نیشنل پولیس، انٹرنیشنل سیکورٹی ایجنسیر، یوروپول کے ساتھ ملک کرپولینڈ میں غیر قانونی اسلحہ اسمگلنگ کے انٹرنیشل گروہ کے خلاف ایک کامیاب آپریشن ترتیب دیا اس معلومات پر مبنی آپریشن کے دوران پولینڈ کے دو شہروں ویتو کرزکی اور اوڈکیویوڈشپ کے علاقوں میں واقع گھروں پر چھاپے مارے گیے جن کے نتیجے میں ایک سو سے زائد غیر قانونی اسلحہ جس میں خودکار رائفلیں، ریوالور، پستول، ہینڈ مشین گن،دستی بم اور بڑی مقدار میں گولہ بارود اور 50 ہزار یورو سے زائید کیش قبضے میں لے کر 12 افراد گرفتار کرلیا جن کا تعلق پولینڈ سےہے۔

غیر قانونی اسلحہ کی اسمگلنگ میں ملوث یہ منظم گینگ سلواکیہ سے پولینڈ ،روس ،اور یوکرائن میں غیر قانونی اسلحہ اسمگل کرتا تھا۔ پولش لاانفورسمنٹ اداروں نے اس سے قبل دیگر ایجنسیوں جن میں خاص طور یوروپول شامل ہے کہ ساتھ مل کر یورپ میں غیر قانوی اسلحہ کی اسمگلنگ کے بڑھتے ہوئے واقعات کے باعث سخت اقدامات کر رکھے ہیں۔ اس سے قبل ان جرائم پیشہ گروہ کیخلاف کیے جانے والے آپریشنز میں 200 سے زائد آتشیں اسلحہ اورگولہ بارود کے کی ہزار راونڈ قبضے میں لیے جاچکے ہیں اس گینگ کے 15 افراد پہلے سے گرفتار ہیں ان مجرموں میں 9 کا تعلق یوکرائن 5 کا تعلق پولینڈ اور اور ایک کاتعلق روس سے ہے۔

اس سلسلے میں یورپ کے دیگر ممالک میں چھاپے مارے جارہےاور مزید گرفتاریاں متوقع ہیں یورپی لاانفوسمنٹ اداروں کی جانب سے یورپ کے مختلف ممالک میں غیر قانونی اور جعلی کیڑے مار ادویات بنانے والے کمپنیوں کے خلاف آپریشن سلیکشن ایکس ترتیب دیا گیا اس انٹرنیشنل آپریشن میں 35 ممالک کے قانون نافذ کرنے اداروں کے کے سا تھ یورپی یونین انٹلیکچول پراپرٹی آفس , یورپی انٹی فراڈ ،یورپی کمشین کے ڈی جی سائنٹے، یورپی کروپ پروٹیکشن ایسوسی ایشن اور کراپ لائف یورپ نے حصہ لیا۔ جعلی اور غیر قانونی ادویات بنانے والی یہ کمپنی مختلف طریقوں سے یہ جعلی ادویات نہ صرف یورپی مارکیٹ میں فروخت کررہے تھے بلکہ ایشیا اور جنوبی ایشیا بھی اسمگل کی جاتی تھیں یہ جعلی اورناقص ادویات ناصرف ماحول کے لیے خطرناک ہیں بلکہ انسانی صحت کے لیے بھی انتہائ مضر ہیں

آپریشن ایکس کے دوران 763 جگہوں پر چھاپے مارے گیے اور 268 جگہوں کو سیل کیا گیا جس کے نتیجے میں 1203 ٹن جعلی کیڑے ادویات قبضہ میں لے لی گئیں ان کاروائیوں کے دوران 12 افراد کو گرفتار کیا گیا جن میں سے 7 کا تعلق اٹلی اور 5 کا تعلق اسپین سے ہے اس آپریشن کے حوالے سے یورپول کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر کیتھرین ڈے ہولے نے اپنے بیان میں کہا کہ آپریشن ایکس میں ان کمپنیوں کیخلاف کارروائی کی ہے جو ناصرف ماحول بلکہ ہماری صحت کو خطرے میں ڈال رہے ہیں ہم ایسے تمام جرائم کو مل کر ختم کریں گے جو ہمارے شہریوں کی زندگیوں کیساتھ کھیل رہے ہیں آس آپریشن میں یورپی ممالک آئرلینڈ، آسٹریا، بیلجیم، بلغاریہ، کروشیا، سائپرس، چیک ریپبلک، ڈنمارک، ایسٹونیا، فرانس، فن لینڈ، جرمنی، یونان، ہنگری،اٹلی اور لیٹویا شامل ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *