Categories
Breaking news

یورپی یونین کے تارکین وطن: کورونا کیسز زیادہ مگر ویکسنز کم، ECDC کا انکشاف

میڈرڈ (محمد نبی) یورپین سینٹر فار ڈیزیز پریونیونٹشن اینڈ کنٹرول (ECDC) کے مطابق کورونا وبا نے یورپ میں تارکین وطن کو سخت متاثر کیا۔ مزید یہ انکشاف بھی ہوا ہے کہ یہی وہ گروہ ہے جس کو سب سے کم ویکسینیٹ کیا گیا۔ رپورٹ کے مطابق ڈنمارک، ناروے اور سویڈن کے تارکین وطن میں کورونا مثبت کیسز کی شرح باقی آبادی سے بلندی پر رہی۔ دوسری طرف اٹلی اور اسپین میں موجود تارکین وطن کو ہسپتالوں میں داخل کروانے کی سب سے زیادہ ضرورت محسوس کی گئی۔

گزشتہ ہفتے پیش کئے جانے والے اعداد و شمار کے مطابق کل کورونا کیسز کے حساب سے ناروے میں 42 فیصد کیسز، ڈنمارک 26 فیصد جب کہ سویڈن 32 میں فیصد کیسز تارکین وطن کے حصے میں آئیں۔ علاوہ ازیں اسپین اور اٹلی کے ساحوں کو باقی آبادی کی نسبت زیادہ ہسپتال لے جانے کی ضرورت پیش آئی۔ تارکین وطن عموما زیادہ ہجوم والی جگہوں پر رہتے ہیں اور وہ ایسے کاموں میں جتے ہوتے ہیں جہاں وبا پھیلنے کا خطرہ قدرے زیادہ ہوتا ہے۔ اس پہ مستزاد یہ کہ انہیں ہیلتھ کئیر سروسز تک رسائی نہیں ہوتی۔ خاص کر جب وہ اندراج شدہ نہیں ہوتے تو یہ امکانات مزید بڑھ جاتے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *