Categories
Breaking news

ہسپانوی فیڈریشن آف اسلامک ریلیجئس اینٹیٹیزنے بھی رمضان کے دوراں کرفیومیں نرمی کامطالبہ کردیا

Advertisement
Advertisement

اسپین (محمد نبی) اسپین کی فیڈریشن آف اسلامک ریلیجئس اینٹیٹیر نے علاقائی اور مقامی انتظامیہ سمیت متعلقہ پبلک حکام پر زور دیا ہے کہ وہ مل کر کوئی لائحہ عمل طے کریں جس کے تحت ماہِ رمضان کے دوراں مخصوص اوقات میں کورونا پابندیوں میں نرمی برتی جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ اسپین کے کچھ علاقوں میں کرفیو نمازِ فجر اور نمازِ عشاء کے اوقات کے ساتھ متصادم ہو رہا ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ اسپین کی مسلم کمیونیٹی کے لئے عبادت گاہوں کو کھولنے اور بند کرنے کے حوالے سے نیا لائحہ عمل طے کیا جائے۔
ایف ای ای آر آئی نے یہ درخواست بھی کی ہے کہ رمضان میں رات کے وقت کچھ لوگ کام پر جاتے ہیں جن کی وجہ سے پبلک سیفٹی کو کوئی خطرہ نہیں اور وہ مفاد عامہ کےلئے پریشان کا باعث نہیں بنتے۔ مزید انہوں نے کہا کہ مسکم کمیونیٹی حفاظتی اقدامات کا خیال رکھتی ہے اور مساجد عوامی مفاد کو داؤ پہ لگائے بغیر اور کورونا پروٹوکول کو اپناتے ہوئے اپنا کام جاری رکھیں گی۔ انہوں نے یاد دلایا کہ مسلمان اس امرکے پابند ہیں کہ پانچ وقتہ نماز پابندی کے ساتھ ادا کریں۔ نماز کے اوقات میں نہ پیشگی کی اجازت ہے اور نہ ہی تاخیر کی گنجائش۔
فیڈریشن نے نشان دہی کی کہ مذہبی عبادات کی آزادی بنیادی حقوق کے زمرے میں آتی ہے جس کے ہسپانوی آئین اور یورپی اقوام متحدہ ضامن ہیں۔ انہوں نے مسلمان بالخصوص مساجد کے منتظمین سے بھی درخواست کی کہ تمام حفاظتی تدابیر پر عمل کیا جائے اور حفظان صحت کے اصولوں کی پابندی کریں۔

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *