Categories
Breaking news

کیوبا نے امریکی ڈالر کی وصولی پر پابندی عائد کردی

کیوبا کرنسی

کیوبا کے مرکزی بینک نے تمام بینکوں کو ہدایت کی ہے کہ امریکی ڈالر میں نقد رقوم کی شکل میں قبول نہ کی جائیں، کیوبا حکومت نے یہ اقدام امریکی تجارتی پابندیوں سے نمٹنے کیلئے اٹھایا ہے۔

کیوبا کے بینکاری نظام نے پیر سے جمع کرانے کے لئے امریکی ڈالر میں نقد رقوم قبول کرنا بند کردی ہے۔ حکومت کی جانب سے ان اقدامات کا اعلان 10 روز قبل اس جزیرے پر طویل عرصہ سے جاری امریکی تجارتی پابندی کے ایک حصے کے طور پر نئی عائد ہونے والی پابندیوں کے اثرات سے نمٹنے کے لئے کیا گیا ہے۔

کیوبا کے مرکزی بینک نے ایک بیان میں کہا ہے کہ یہ اقدام اس لئے ضروری تھا کہ ایک سال سے زیادہ عرصہ قبل کیوبا کے بینکوں کو بین الاقوامی بینکوں میں امریکی ڈالر ڈپازٹ کرنے سے روک دیا گیا تھا۔

بینک نے کہا ہے کہ اس اہتمام کے ذریعے کیوبا میں تبادلوں ، یا آزادانہ طور پر بدلی جانے والی کرنسیوں کی نقد رقم کےڈپازٹ کے ذریعے کی جانے والی کارروائیوں پر پابندی نہیں اور یہ صرف امریکی ڈالر (نقد رقم میں) پر لاگو ہے۔

بینک نے مزید کہا ہے کہ یہ اقدام کب تک برقرار رہے گا، اس کا انحصار ان پابندیوں پر ہے ، جو امریکی ڈالر میں برآمدی لین دین کے معمول کے عمَل کو روکتا ہے۔

سال 1962 سے قائم رہنے والی اس تجارتی پابندی پر ڈونلڈ ٹرمپ کی سابق امریکی انتظامیہ کی جانب سے شدت لائی گئی تھی ، جس نے کیوبا میں ترسیلات زر معطل کرنے سمیت 240 سے زائد پابندیاں اور رُکاوٹیں عائد کردی تھیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *