Categories
Breaking news

کومے میں رہنے والا سعودی شہزادہ 15 سال بعد ہوش میں آنے لگا

Advertisement

15 سال بعد شہزادے میں زندگی کی دوبارہ امید جاگی ہے

پندرہ برس سے کومے میں رہنے والے سعودی شہزادے میں زندگی کے آثار پیدا ہوگئے، نوجوان شہزادے کی انگلیوں کے حرکت کرنے کی ویڈیو وائرل ہوگئی۔

Advertisement

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ڈاکٹروں کی جانب سے سعودی شہزادے خالد بن طلال کے بیٹے میں 15 برس بعد زندگی کی آثار پیدا ہونے کو ناقابل یقین قرار دیتے ہوئے قدرت کا معجزہ قرار دیا گیا ہے۔

کیونکہ اربوں کی جائیداد کے مالک شہزادہ ولید بن خالد بن طلال گزشتہ برس سے کومہ تھے اور ماہر سے ماہر ڈاکٹر بھی انہیں ہوش میں لانے میں ناکام رہا تھا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق شہزادہ ولید 2005 میں ملٹری کالج سے تعلیم حاصل کرنے کے دوران ایک ٹریفک حادثے کا شکار ہوگئے تھے جس کے بعد وہ کومہ میں چلے گئے۔

? فيديو الأمير النائم
بعد 15 عاما قضاها في غيبوبة … الأمير النائم الوليد بن خالد يحرك يده …
اللهم ردّ له عافيته كما رددت البصر ليعقوب وكما بقدرتك انجبت مريم من غير زوج وأخرجت يونس من بطن الحوت وحملت زوجة ابراهيم عليه السلام وهي عقيم …
يا رحمن يارحيم نسألك برحمتك أن تشفيه pic.twitter.com/QSeOOaKLkw

— يحيى الغماري (@yahyaalghamri) October 19, 2020

سعودی شہزادے کے طویل عرصے سے کومہ میں رہنے کے باعث ’سویا ہوا شہزادہ’ کہا جاتا ہے، جسے ہوش میں لانے کےلیے تین امریکی اور ایک ہسپانوی ڈاکٹرز برسوں سے کوششیں کررہے تھے لیکن کامیاب نہیں ہوسکے۔

لیکن اب شہزادہ ولید بن خالد بن طلال کی انگلیوں میں اچانک حرکت پیدا ہوگئی جس کی ویڈیو بھی سوشل میڈیا پر وائرل ہورہی ہے، ویڈیو میں ایک خاتون کی آواز سنی جاسکتی ہے جو شہزادے سے اپنی انگلیاں اوپر اٹھانے کا کہتی ہے اور اچانک شہزادہ ولید بن خالد اپنی انگلیاں اوپر اٹھاتے ہیں اور پھر ہتھیلی کو اٹھایا۔

شہزادے کے ہاتھ میں حرکت دیکھ کر اہل خانہ اور طبی عملہ دونوں خوش ہوئے، کیونکہ ان 15 سال بعد شہزادے میں زندگی کی دوبارہ امید جاگی ہے۔

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *