Categories
Breaking news

کورونا وائرس، انگلینڈ سے باہر چھٹیوں پر جانے والوں کو 5 ہزار پاؤنڈ جرمانہ ہوگا

Advertisement
Advertisement

لندن (وجاہت علی خان) انگلینڈ سے باہر چھٹیوں پر جانے والوں کو 5 ہزار پائونڈ جرمانہ ہوگا، حکومت آئندہ ہفتے کورونا وائرس کے ضمن میں ایک نیا قانون نافذ کرے گی جس کے تحت بغیر کسی ضروری اور ناگزیر وجہ کے چھٹیاں گزارنے جانے والوں کو پانچ ہزار پائونڈ جرمانہ کیا جائے گا۔ اس سزا کو قانون سازی میں شامل کیا گیا ہے جس پر آئندہ جمعرات 25 مارچ کو ارکان پارلیمنٹ ووٹ دیں گے جس کے بعد بلاوجہ برطانیہ چھوڑنے پر پابندی باقاعدہ قانون کی شکل اختیار کر جائے گی۔ یاد رہے کہ فی الوقت لاک ڈائون قوانین کے مطابق برطانیہ سے باہر چھٹیاں گزارنے جانے کی تاریخ 17 مئی طے کی گئی ہے، یورپ بھر میں کوویڈ 19 کیسز میں اضافے اور ویکسین میں سست روی نے بھی مذکورہ قانون نافذ کرنے کے فیصلے کو تقویت دی ہے۔ سیکرٹری صحت میٹ ہینکوک نے کہا ہے کہ یہ قانون نافذ کرنا اس لئے بھی ضروری ہے تاکہ بیرون ملک سے واپس آنے والے افراد نئی قسم کے وائرس لے کر برطانیہ نہ آسکیں جس سے جاری ویکسین پروگرام کو بھی خطرہ ہوسکتا ہے۔ لیبرپارٹی نے بھی مذکورہ قانون کی حمایت کا اعلان کیا ہے۔ ایک حکومتی وزیر لارڈ بیھتل کا کہنا ہے کہ ہوسکتا ہے آنے والے دنوں میں انگلینڈ اپنے تمام ہمسایہ یورپی ممالک کو ’’ریڈلسٹ‘‘ ممالک کی لسٹ میں شامل کردے، حکومت کی گلوبل ٹاسک فورس سفری پابندیاں ختم ہونے کے بعد بھی ایک ایسا سسٹم متعارف کروانے پر غور کر رہی ہے جس میں بعض پابندیاں بہرصورت عائد ہوں گی۔

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *