Categories
Breaking news

کربلا والوں نے جانیں قربان کر کے حق کا پرچم تاقیامت بلند کردیا

Advertisement
Advertisement

کربلا والوں نے جانیں قربان کر کے حق کا پرچم تاقیامت بلند کردیاکربلا والوں نے جانیں قربان کر کہ حق کا پرچم تاقیامت کے لئے بلند کردیا ہے، نواسہ رسول حضرت امام حسین ؑ نے اسلام کو ایک نئی زندگی دی۔

کربلا میں موجود سادات کا قافلہ آنے والے دنوں میں قربانیاں پیش کرنے کی تیاریوں میں مصروف ہے۔یہ خانوادہ اسلام کی سربلندی کے لیے ایسی مثالی قربانیاں پیش کرے گا جس کی رہتی دنیا تک مثال نہیں ملے گی۔اور اس قربانی میں بچے بھی پیچھے نہیں رہیں گے۔

چوتھی محرم الحرام یوم شنبہ کو ابن زیاد نے کوفیوں کو مسجد میں جمع کیا اور ان کے بزرگوں کے درمیان یزید کے بھیجے گئے تحفے تقسیم کئے جو 4000 دینار اور دو لاکھ درہم تک تھے اور انہیں دعوت دی کہ کربلا جاکر امام حسینؑ کے خلاف جنگ میں عمر سعد کی مدد کریں۔

اس کے کہنے سے بے شمار لوگ آمادہ کر بلا ہو گئے اور سب سے پہلے شمر نے روانگی کی درخواست کی ۔آج ہی کے روز شمر لعین چار ہزار کا لشکر لے کر کربلا میں داخل ہوا تھا۔۔شمر وہ ہے جس نے امام حسین ع کے گلے پر کند خنجر چلایا۔

ابن زياد نے کوفہ کی کارگزاری عمرو بن حریث کے سپرد کردی اور خود نخیلہ میں خیمے لگا کر بیٹھ گیا اور لوگوں کو بھی نخیلہ پہنچنے پر مجبور کیا۔ اور کوفیوں کو کربلا جاکر امام حسینؑ سے جاملنے سے باز رکھنے کی غرض سے پل کوفہ پر قبضہ کیا اور کسی کو بھی اس پل سے نہیں گذرنے دیا۔

امام حسین (ع) نے کربلا کے ریگزار میں عظیم قربانی دیکر اسلام کو تا قیامت کیلئے حیات بخش دی اور اسلام کو نئی زندگی دی، واقعہ کربلا ہمیں اس بات کی طرف دعوت دیتا ہے کہ ہم اسلام پر ہر چیز کو قربان کرسکتے ہیں، لیکن اسلام کو کسی چیز پر قربان نہیں کرسکتے، اس راستے میں اگر جان بھی دینا پڑ جائے تو دریغ نہ کریں۔

معرکہ کربلا میں جہاں بزرگ اور جوانوں نے قربانیاں دیں وہیں بچے بھی آگے آگے رہے۔ ان ہی بچوں میں رسول خدا کی نواسی اور حضرت علیؑ کی بیٹی بی بی زینب کے بچے عون و محمد بھی ہیں۔
دونوں بھائی بھی فوج اشقیاء سے لڑتے ہوئے شہید ہوئے۔

آج کا دن چار محرم جعفر طیار کے پوتوں عون و محمد سے منسوب ہے۔ علما بیاں کرتے ہیں عون و محمد کی شہادت دریائے فرات کے کنارے ہوئی۔
چار محرم ہی کو شمر لعین چار ہزار کا لشکر لے کر کربلا میں داخل ہوا۔ یہ وہ شمر ہے جس نے امام حسین کے خشک گلے پر کند خنجر چلایا۔

پاکستان سمیت دنیا بھر میں نواسہ رسول کی قربانی کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لئے چار محرم کی مناسبت سے مجالس عزا ہو رہی ہیں۔

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *