Categories
Breaking news

کراچی میں ڈینگی کا وار تھم نہ سکا

ڈینگی کا وار

صحت کے ماہرین کے مطابق کراچی میں ڈینگی اور ملیریا جیسی علامات کے لاتعداد مریض سامنے آئے ہیں۔ پراسرار وائرس سے لاحق ہونے والا یہ مرض تیزی سے پھیل رہا ہے۔ رپوٹ کے مطابق بچوں، بڑوں اور خواتین سمیت کئی افراد نجی اور سرکاری ہسپتالوں میں لائے گئے ہیں جن میں بلند بخار، دردِ سر اور عین ڈینگی یا ملیریا…

ان تمام افراد نے مچھر کاٹنے کی شکایت کی ہے لیکن ٹیسٹ میں ان کا کوئی مرض سامنے نہیں آتا۔ طبی ماہرین نے عوام کو مچھروں سے ہرممکن بچاؤ کی ہدایت کی ہے کیونکہ مریضوں میں ڈینگی، ملیریا، چکن گونیا سمیت مچھروں سے لاحق ہونے والی تمام بیماریوں کے ٹیسٹ منفی آرہے ہیں۔

ایکسپریس ٹریبیون سے بات کرتے ہوئے ڈاؤ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسِس میں سالماتی پیتھالوجی کے ماہر ڈاکٹر سعید خان نے کہا کہ سردموسم میں ڈینگی میں تیزی سے اضافہ ہوجاتا ہے۔ مون سون بارشوں کے بعد بہت سی جگہوں پر بارشوں کا پانی کھڑا ہے۔ جہاں طرح طرح کے مچھر پروان چڑھ رہے ہیں اور مختلف اقسام کے مچھر ان وائرسوں کو انسانوں تک پہنچارہے ہیں۔
شہرکے ایک اورمعروف پیتھالوجسٹ نے بتایا کہ ڈینگی اورملیریا کی تمام علامات کے باوجود ڈینگی بخاراوراین ایس ون جیسے ٹیسٹ میں بھی کچھ پتا نہیں چل رہا ۔ اسی طرح ملیریا کے پی سی آر ٹیسٹ بھی کئے گئے ہیں اور وہ بھی منفی نکلے ہیں۔ جب ان واقعات کی تعداد بڑھی تو اب طبی ماہرین چوکنا ہوگئےہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.