Categories
Breaking news

کاتالونیا: یونیورسٹیوں کے داخلی امتحانات شروع، زبان کا مسئلہ حل نہ ہو سکا

بارسلونا (محمد نبی) کاتالونیا میں منگل سے ‘Batxillerat’ سیکنڈری سکول کے 40,000 طلباء کا ‘PAU’ یوینیورسٹی کے داخلی امتحانات شروع ہو گئے ہیں۔ یہ امتحانات ہائی کورٹ (TSJC) کے کاتالان زبان کو ترجیحی طور پر اپنانے کی مخالفت میں فیصلہ دینے کے 24 گھنٹے بعد شروع ہوئے ہیں۔ دریں اثناء یہ ٹیسٹ ماضی میں کاتالونیا کی دیگر سرکاری زبانیں جیسے کاتالان، ہسپانوی زبان اور ایرینیس میں بھی ہوتی رہی ہیں۔

حکام نے ان کو کاتالونیا میں تقسیم کر رکھا ہے اور درخواست پر ان دوسری زبانوں میں بھی ٹیسٹ ہوتے تھے۔ تاہم کاتالونیا میں دو لسانی سکولنگ کی اسمبلی کی طرف سے دائر شکایت میں موقف اختیار کیا گیا تھا کہ طلباء کو کسی بھی زبان میں امتحان دینے کا اختیار دیا جائے۔ عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ طالب علموں کو دیگر سرکاری زبانوں میں سے کوئی ایک اختیار کرنے کی اجازت دی جانی چاہئے۔ اور اس کا انحصار ان کی ذاتی ترجیح پر ہونا چاہئے۔

اس کے باوجود ابھی کاتالونیا کے تحقیقی شعبے اور یونیورسٹیوں کے ڈپارٹمنٹ اپنی سمت تبدیل کرنے کی پوزیشن میں نہیں ہیں۔ وہ عدالت پر غیر ضروری مداخلت کا الزام لگاتے ہوئے، کاتالان زبان میں ہی امتحانات لینے کے لئے پرعزم ہیں تاوقتیکہ طالب علم مطالبہ نہ کر لیں۔ بارسلونا کی آٹونومس یونیورسٹی (UAB) کے 5,000 طالب علموں میں سے صرف 67 طالب علموں ںے ہسپانوی زبان میں ٹیسٹ دینےکی درخواست کی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *