Categories
Breaking news

ڈبلیو ایچ او: لاک ڈاؤن کی اب کوئی ضرورت نہیں ہوگی، مگر کیسے؟

Advertisement
Advertisement

ڈبلیو ایچ او اور لاک ڈاؤن

عالمی ادارہ صحت کے ایک عہدیدار نے کہا ہے کہ اگر95 فیصد لوگ ماسک پہنیں تو لاک ڈاؤن کی کوئی ضرورت نہیں ہوگی سینیٹائزر لگانا بھی لازمی امر ہے۔

گزشتہ روز پریس بریفنگ کے دوران گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اگرچہ ماسک پہننے سے کورونا وائرس کے خلاف مکمل طور پر بچاؤ نہیں ہوتا لیکن یہ بہت ضروری ہے۔

عالمی صحت تنظیم (ڈبلیوایچ او) یورپی علاقے کے ڈائریکٹر ہنس کلگو نے کہا کہ اگر95 فیصد لوگ محفوظ ماسک پہنتے ہیں تو ملک کے کسی بھی حصے میں کورونا وائرس کے سلسلے میں لاک ڈاؤن لگائے جانے کی ضرورت نہیں پڑے گی۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر ہم سبھی اپنے حصے کا کام کریں یعنی محفوظ ماسک پہنیں تو لاک ڈاؤن سے بچاجاسکتا ہے، میں اس بات سے پوری طرح متفق ہوں لاک ڈاؤن کورونا وائرس کے خلاف اٹھایا جانے والا آخری طریقہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ اگرچہ ماسک پہننے سے کورونا وائرس کے خلاف مکمل طور پر بچاؤ نہیں ہوتا تاہم اس کے ساتھ سوشل ڈسٹنسنگ اور ہاتھوں کے سینیٹائز کرنے سے لے کر تمام دیگر طریقوں کو بھی اپنانا ضروری ہے لیکن ماسک بے حد ضروری ہے۔

ایک سوال کے جواب میں ڈائریکٹر ہنس کلگو نے کہا کہ کورونا انفیکشن کو روکنے کے لئے اسکولوں کو بند کرنے کو مؤثر قدم یا طریقہ کار نہیں مانا جاسکتا کیونکہ بچوں اور نوجوانوں کو کورونا انفیکشن کا بنیادی کیریئر نہیں مانا گیا ہے۔

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *