Categories
Breaking news

چوہدری افضال وڑائچ کے والدین کے لئے مسجد فیضان مدینہ میں دعائیہ تقریب

بارسلونا(دوست نیوز)معروف بزنس مین اورسماجی شخصیت چوہدری محمد افضال وڑائچ کے والدین کی روح کے ایصال ثواب کے لئے بارسلونا سنٹر مسجد فیضان مدینہ میں دعائیہ تقریب اور افطاری کا اہتمام کیا گیا۔جس میں پاکستانی کمیونٹی کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

اس موقع پر والدین کی وفات کے بعد ان کے حقوق پر بات کرتے ہوئے کہا کہ والدین اور اولاد کے درمیان جو رشتہ ہے وہ فطری ہے۔ اللہ تعالیٰ نے یہ رشتہ قائم کیا ہے اور اسی نے ان کے درمیان الفت ومحبت پیدا کی ہے۔ سعادت مند اولاد زندگی بھر اپنے والدین کی خدمت کرتی ہے، ان کی اطاعت وفرماں برداری کرتی ہے، ان کی کڑوی باتوں کا بھی برا نہیں مانتی اور ان کی ضعیفی وبیماری میں ان کے لیے مضبوط سہارا بن کر کھڑی رہتی ہے۔

والدین دنیا میں ہمیشہ نہیں رہتے- کبھی ان کی وفات ضعیفی کی عمر میں ہوتی ہے اور کبھی اس سے پہلے ہی وہ دنیا سے رخصت ہوجاتے ہیں۔دونوں صورتوں میں سعادت مند اولاد کے دل میں یہ خواہش رہتی ہے کہ کاش ان کی خدمت کرنے کا کچھ اور موقع مل جاتا لیکن اللہ نے ہر ایک کے لیے ایک وقت مقرر کردیا ہے اور وہ اسی مقررہ وقت پر دنیا چھوڑ جاتا ہے۔ والدین کی تربیت سے فیض یاب سعادت مند اولاد کےدل میں ابھرنے والی اس فطری خواہش کی تکمیل والدین کی وفات کے بعد بھی ان کے ساتھ حسن سلوک کرنے کا دروازہ کھلا ہوا ہے اور کئی ایک کام ایسے ہیں جن کو انجام دے کر ان کی نیکیوں میں اضافہ کیا جاسکتا ہے اور انھیں ثواب پہنچایا جاسکتا ہے۔صحابی رسول نے جب آپ سے یہ سوال کیا کہ والدین کی وفات کے بعد بھی ان کے ساتھ نیکی کرنے کی کوئی صورت ہے تو آپ نے نفی میں نہیں بلکہ اثبات میں جواب دیااور انھیں بتایا کہ والدین کو ثواب پہنچانے کی کئی ایک صورتیں ہیں۔

دعائیہ تقریب میں شریک دوست احباب جن میں میاں طاہر مجید قاضی ۔مہربلال عزیز،چوہدری ذوالقرنین کھوکھر،چوہدری ناصرمحمودچھینہ اور دیگر دوست احباب نے چوہدری محمد افضال وڑائچ کے والدین کی روح کے بلندی درجات کے لئے فاتحہ خوانی کی اور دعا کی کہ اللہ تعالیٰ مرحومین کو جنت الفردوس اور لواحقین کو صبر جمیل عطا فرمائے آمین

چوہدری محمد افضال وڑائچ کی والدہ محترمہ جو کہ حال ہی میں30 مارچ 2021پاکستان وفات پا گئی تھی اور والد محترم مرحوم 2019 میں وفات پا گئے تھے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *