Categories
Breaking news

پنجاب اسمبلی کا ون پوائنٹ ایجنڈا، وزیرِ اعلیٰ کا انتخاب

پنجاب اسمبلی کا ون پوائنٹ ایجنڈا، وزیرِ اعلیٰ کا انتخاب

پنجاب اسمبلی کا اجلاس آج 11 بجے دن ہونے جا رہا ہے جس کا ون پوائنٹ ایجنڈا وزیراعلیٰ کا انتخاب ہے۔

حمزہ شہباز اور چوہدری پرویز الہٰی وزارتِ اعلیٰ کے لیے امیدوار ہیں۔

حمزہ شہباز کی اسمبلی آمد

اپوزیشن کے پنجاب کی وزارتِ اعلیٰ کے امیدوار حمزہ شہباز پنجاب اسمبلی پہنچ گئے۔

اس موقع پر انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں اکثریت حاصل ہے، آج دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو جائے گا۔

ایک صحافی نے حمزہ شہباز سے سوال کیا کہ اگر استعفے آ جاتے ہیں تو پھر کیا کریں گے؟

حمزہ شہباز نے جواب دیا کہ استعفیٰ صرف ایک آئے گا اور وہ عمران نیازی کا ہو گا، یہ لوگ مگر مچھ کے آنسو بہانا چاہتے ہیں۔

ووٹ ڈالوں گا تو سب کو پتہ چل جائیگا: جلیل شرقپوری

مسلم لیگ ن کے ناراض ایم پی اے جلیل شرقپوری پنجاب اسمبلی پہنچ گئے۔

اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جب ووٹ ڈالوں گا تو سب کو پتہ چل جائے گا۔

جلیل شرقپوری کا یہ بھی کہنا ہے کہ میرا ن لیگ کے ساتھ اختلافی پوائنٹ ہے، وزیرِ اعلیٰ جو بھی بنے صوبے کے لیے اچھا ہو۔

موبائل لے جانے پر پابندی

اجلاس کے ایجنڈے کے مطابق ہدایت کی گئی ہے کہ کوئی ممبر موبائل فون ہاؤس میں لے کر نہیں جائے گا، تمام ارکان اپنے فون باہر سیکیورٹی کو جمع کرائیں گے۔

یہ ہدایت بھی کی گئی ہے کہ خواتین ارکان اپنے ہینڈ بیگ سیکیورٹی کو جمع کرائیں گی، ارکانِ اسمبلی شناختی کارڈ اور اسمبلی کارڈ لازمی ساتھ لائیں گے۔

گزشتہ روز نئے وزیرِ اعلیٰ پنجاب کے انتخاب کے معاملے پر ہونے والا پنجاب اسمبلی کا اجلاس 3 گھنٹے 53 منٹ کی تاخیر سے شروع ہوا اور کچھ دیر بعد ہی ملتوی کر دیا گیا تھا۔

پنجاب اسمبلی کے اسپیکر چوہدری پرویز الہٰی نے اجلاس کی صدارت کی، جس کے بعد اجلاس میں مرحوم رکنِ اسمبلی کے لیے فاتحہ خوانی ہوئی۔

اجلاس میں اسپیکر نے آئین کے آرٹیکل 133 کے تحت وزیرِ اعلیٰ کے انتخاب کے لیے کاغذاتِ نامزدگی سیکریٹری اسمبلی سے حاصل کرنے کی ہدایت کی تھی۔

گورنر پنجاب چوہدری سرور برطرف

دوسری جانب وفاقی حکومت نے وزیرِ اعلیٰ کے انتخاب سے قبل گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور کو ان کے عہدے سے برطرف کر دیا۔

یہ بات وفاقی وزیرِ اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری کیے گئے ایک بیان میں بتائی ہے۔

فواد چوہدری کے مطابق نئے گورنر پنجاب کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔

وفاقی وزیرِ اطلاعات و نشریات کا یہ بھی کہنا ہے کہ آئین کے مطابق ڈپٹی اسپیکر قائم مقام گورنر پنجاب دوست محمد مزاری ہوں گے۔

گورنر کو پرویز الہٰی کے کہنے پر برطرف کیا گیا

ذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ گورنر پنجاب چوہدری سرور کو چوہدری پرویز الہٰی کے کہنے پر برطرف کیا گیا ہے۔

حکومتی ذرائع کا کہنا ہے کہ چوہدری سرور وزارتِ اعلیٰ کے منصب کے لیے چوہدری پرویز الہٰی کی مخالفت کر رہے تھے۔

چوہدری سرور حمزہ کیلئے مہم چلا رہے تھے

حکومتی ذرائع نے بتایا ہے کہ چوہدری سرور حمزہ شہباز کے لیے مہم چلا رہے تھے۔

پرویز الہٰی نے وزیرِ اعظم عمران خان کو ٹیلی فون کر کے اس بات کی شکایت کی۔

وزیرِ اعظم عمران خان نے معاملے کا نوٹس لیتے ہوئے صدرِ مملکت عارف علوی کو گورنر پنجاب چوہدری سرور کی برطرفی کے لیے ایڈوائس دی۔

گورنر نے بزدار کا استعفیٰ منظور کیا

یاد رہے کہ ایک روز قبل وزیرِ اعظم عمران خان سے مشاورت کے بعد گورنر پنجاب چوہدری سرور نے عثمان بزدار کا پنجاب کی وزارتِ اعلیٰ سے استعفیٰ منظور کیا تھا۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published.