Categories
Breaking news

پاکستان اور ترکی کی مشترکہ فوجی مشقیں، اتاترک الیون 2021ء کا نام دیا گیا ہے: آئی ایس پی آر

Advertisement
Advertisement

پاکستان اور ترکی کی مشترکہ فوجی مشقیں، اتاترک الیون 2021ء کا نام دیا گیا ہے: آئی ایس پی آر

پاکستان اور ترکی کی مشترکہ فوجی مشقیں” اتاترک الیون” کا آغاز ہوگیا ہے، تربیتی مشقیں تین ہفتے تک جاری رہیں گی۔

تفصیلات کے مطابق ٓئی ایس پی آر کی جانب سے جاری بیان کے مطابق پاکستان اور ترکی کی مشترکہ فوجی مشقیں جنہیں اتاترک الیون 2021ء کا نام دیا گیا ہے، مشقوں کی افتتاحی تقریب اسپیشل سروسز گروپ ہیڈ کوارٹرز تربیلہ میں منعقد ہوئی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق ترک اسپیشل فورسز اور ایس ایس جی ٹروپس تین ہفتوں پر محیط مشترکہ مشقوں میں حصہ لیں گے، ان مشقوں میں انسداد دہشت گردی، کلوزکوارٹر بیٹل، کارڈن اینڈ سرچ، ریپلنگ، فائر اینڈ موو، ہیلی کاپٹر ریپلنگ، کمپاونڈ کلیئرنس، فری فال اور یرغمالی رہا کرانے کے حوالے سے ٹیکنیکس شامل ہوں گی۔
آئی ایس پی آر کے مطابق مشترکہ مشقیں دونوں برادر اقوام کے رشتے کو مزید مضبوط کریں گی اور ان مشقوں سے جدید فوجی رجحانات اختیار کرنے اور تعاون میں مدد ملےگی۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق گذشتہ روز آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کھاریاں گیریژن کا دورہ کیا، اس موقع پر کمانڈر سینٹرل کمانڈ لیفٹیننٹ جنرل شاہین مظہر نے ان کا استقبال کیا۔

ترجمان پاک فوج کے مطابق آرمی چیف نے سینٹرل کمانڈ کے زیر اہتمام فوجی مشقوں کا جائزہ لیا اور ملکی دفاع کے حوالے سے مختلف حکمت عملی کی تعریف کی۔

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے افسران سے اظہار خیال کرتے ہوئے پیشہ ورانہ صلاحیتوں، تیاریوں کی تعریف کی۔

آرمی چیف نے روایتی، غیر روایتی خطرات سے نمٹنے کے لیے افسران کے عزم کی تعریف کی اور مادرن وطن کے دفاع کے لیے آپریشن تیاریوں کے عزم کو سراہا۔

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *