Categories
Breaking news

پابندیوں میں نرمی، لوگ تدفین میں شرکت کرسکیں گے، سماجی دوری کا خیال رکھنا ہوگا

لندن (سعید نیازی) حکومت کے نئے منصوبے کے مطابق 17 مئی کے بعد تدفین میں محدود افراد کی شرکت کی شرط کو ختم کردیا جائے گا، حکومت پابندیوں میں نرمی کے روڈ میپ سے ایک ماہ قبل ہی 30 افراد کی حد کو ختم کرنے کی تیاری کر رہی ہے۔ اس تبدیلی کا مطلب ہوگا کہ غم منانے کیلئے جمع ہونے والے افراد سماجی دوری کا خیال رکھتے ہوئے شریک ہو سکیں گے۔ لاک ڈائون کے دوران شرکاء کی تعداد محدود رکھنے کی شرط کے سبب اکثریت تدفین کے مراحل کو براہ راست اسٹریمنگ کے ذریعے دیکھ رہی تھی اور اس دوران لوگوں کو ہاتھ ملانے اور گلے لگنے کی اجازت بھی نہیں تھی۔ انگلینڈ میں لاک ڈائون کے تیسرے مرحلے کا آغاز 17 مئی سے ہوگا۔

کمیونٹیز سیکرٹری رابرٹ جینرک نے کہا ہے کہ وبا کے دوران لوگوں نے بہت قربانیاں دی ہیں نے کہا ہے کہ وبا کے دوران لوگوں نے بہت قربانیاں دی ہیں اور تدفین کے حوالے سے پابندیاں خاص تکلیف دہ تھیں۔ گزشتہ ماہ ڈیوک آف ایڈنبرا کی ونڈر کاسل میں منعقد ہونے والی آخری رسومات میں بھی صرف 30 افراد ہی شرکت کرسکے تھے اور ملکہ برطانیہ کو چیپل میں منعقد تقریب میں اکیلے بیٹھنا پڑا تھا۔ رابرٹ جینرک نے کہا کہ انہیں یقین ہے کہ مذہبی لیڈرز اور فیونرل ہوم مینجرز اس بات کو یقینی بنائیں گے کہ پابندی ختم ہونے کے باوجود لوگ سماجی دوری کا خیال رکھیں۔ اسکاٹ لینڈ میں فی الحال تدفین میں 50 افراد کو شرکت کی اجازت ہے جسے 7 جون سے بڑھا کر ایک سو کردیا جائے گا۔ 17 مئی سے بیرون ملک تعطیلات پر جانے کی اجازت بھی دیئے جانے کا امکان ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *