Categories
Breaking news

ووٹ فروخت معاملہ: خیبرپختونخوا کے وزیر قانون سلطان محمد مستعفی

Advertisement
ووٹ فروخت معاملہ: صوبائی وزیر قانون کے پی سلطان محمد مستعفی

سینیٹ الیکشن 2018 میں ووٹوں کی خرید و فروخت اور اس سے متعلق ویڈیو سوشل میڈیا پر آنے کے بعد وزیر قانون خیبرپختونخوا سلطان محمد نے وزارت سے استعفیٰ دے دیا۔

وزیر قانون سلطان محمد نے وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان کو اپنا استعفیٰ ارسال کردیا۔

Table of Contents

x
Advertisement

واضح رہے کہ 2018 میں سینیٹ الیکشن کے لیے خیبر پختونخوا کے ارکان اسمبلی کی خرید و فروخت کی ویڈیو منظر عام پر آئی ہے جس میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ارکان کے پی اسمبلی کے سامنے نوٹوں کے انبار لگے ہیں اور پی ٹی آئی ارکان کو نوٹوں کے انبار دکھا کر خریدا جارہا ہے۔

خیال رہے کہ 2018 کی اس ویڈیو میں موجودہ وزیر قانون خیبر پختونخوا سلطان محمد خان بھی موجود ہیں۔

خرید و فروخت کی مبینہ ویڈیو منظر عام پر آنے کے بعد وزیراعظم عمران خان نے وزیر قانون کے پی سلطان محمد سے استعفیٰ لینے کا فیصلہ کیا تھا۔

تاہم اب اس معاملے میں تاذہ پیش رفت یہ سامنے آئی ہے کہ وزیر قانون خیبر پختون خوا سلطان محمد نے اپنا استعفیٰ وزیراعلیٰ کے پی کو جمع کروادیا۔

ماضی میں ارکان نے ضمیر بیچا، ویڈیو 2018ء کی ہے، اسد عمر

اسد عمر نے کہا ہے کہ ماضی میں بھی ارکان نے پیسے لے کر ضمیر بیچا ہے، جو ویڈیو منظر عام پر آئی وہ 2018ء کے الیکشن کی ہے۔

اس حوالے سے سلطان محمد کا اپنے استعفے میں کہنا تھا کہ سوشل میڈیا پر وائرل ویڈیو میں میرا نام بھی آیا ہے، اخلاقی طور پر اپنا استعفیٰ دے رہا ہوں۔

سلطان محمد نے وزیراعلیٰ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ کی کابینہ میں کام کرنا میرے لیے اعزاز تھا، میں غیر مشروط طور پر ہر قسم کی انکوائری کے لیے تیار ہوں۔

انھوں نے یہ بھی کہا کہ پُر اعتماد ہوں کہ انصاف ہوگا اور میرا نام کلئیر ہوجائے گا۔

خیال رہے کہ پیپلز پارٹی کے سابق ایم پی اے محمد علی باچا رقم کا بنڈل پی ٹی آئی ارکان کو دیتے نظر آرہے ہیں۔

محمد علی باچا نے اس ویڈیو سے متعلق دلچسپ وضاحت دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ وہاں موجود نہیں تھے، اس ویڈیو ایڈٹ کیا گیا ہے۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *