Categories
Breaking news

وزیر خارجہ شاہ محمود نے دلی میں کشمیر کانفرنس کو ناکام قرار دیدیا

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے دلی میں کشمیر کانفرنس کو ناکام قرار دیتے ہوئے کہا کہ بھارت نے عالمی سطح پر اپنا تاثر بہتر کرنے کی ناکام کوشش کی، کچھ چنے ہوئے لوگوں کو بھارت لے جایا گیا۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ مودی کی جانب سے آل پارٹیز حریت کانفرنس کو دعوت نہیں دی گئی، ساڑھے 3 گھنٹے کی نشست کا کوئی طے شدہ ایجنڈا نہیں تھا۔

افغان مہاجرین کیلئے بین الاقوامی کمیونٹی سے کوئی امداد نہیں مل رہی، شاہ محمود قریشی

شاہ محمودقریشی نے کہا کہ اگر افغانستان کو بین الاقوامی تائید چاہیے تو انہیں تشدد کا راستہ ترک کرنا ہوگا، بین الاقوامی تائید حاصل کرنےکیلئے افغانستان حکومت کوگفت وشنید کاراستہ اپنانا ہوگا۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ کشمیریوں کو کل 5 اگست کے اقدام واپس لینے کے مطالبے پر کوئی جواب نہیں ملا، اے پی سی میں مودی نے اعتراف کیا کہ دلوں کی دوری ہے، کشمیری دلی سے دور ہیں۔

عالمی برادری بھارت میں یورینیم کی غیرقانونی فروخت کا سنجیدگی سے نوٹس لے،صدر مملکت

صدر مملکت نے کہا، پاکستان امریکا کو افغانستان کے خلاف اپنے اڈے استعمال کرنے کی اجازت نہیں دے گا۔ پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بھاری قیمت ادا کی ہے۔

دوسری جانب جیو نیوز کے پروگرام’’نیا پاکستان‘‘میں گفتگو کرتے ہوئے وزیر خارجہ نے کہا کہ بھارت کی جانب سے بلائی گئی اے پی سی میں مودی کو حاصل کچھ نہیں ہوا، اے پی سی میں بھارتی سرکار نے مبہم بات کی، کشمیری رہنماؤ ں نے مطالبہ کیاتھا کہ 5 اگست سےپہلےکی حیثیت بحال کی جائے۔

وزیرخارجہ نے کہا کہ کشمیری رہنماؤ ں کی مودی سرکار سے میٹنگ ہوئی لیکن حاصل حصول کچھ نہیں ہوا۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *