Categories
Breaking news

ن لیگ 28 دن انتظار کرلیتی تو آئینی بحران نہ ہوتا: پرویز الہٰی

—فائل فوٹو
—فائل فوٹو

اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہٰی کا کہنا ہے کہ پنجاب میں آئینی بحران آ چکا ہے، اگر ن لیگ والے 28 دن انتظار کرلیتے تو آئینی بحران نہ ہوتا۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہٰی نے کہا کہ کچھ دنوں کے بعد خبر کچھ اور ہو گی۔

انہوں نے کہا کہ وزارتِ اعلیٰ کا امیدوار تو میں تھا، حمزہ شہباز وزیرِ اعلیٰ نہیں ہیں، حمزہ شہباز کے کہنے پر مجھ پر تشدد کیا گیا جس سے میں بے ہوش ہو گیا۔

حمزہ شہباز نے پنجاب کی وزارتِ اعلیٰ کا حلف اٹھا لیا، گارڈ آف آنر پیش

شہباز شریف تقریبِ حلف برداری میں گاڑی خود ڈرائیو کر کے پہنچے، مریم نواز ان کے ہمراہ تھیں۔

پرویز الہٰی نے کہا کہ وزیرِ اعلیٰ کا الیکشن متنازع نہیں بلکہ الیکشن ہوا ہی نہیں، اسمبلی کی کارروائی کو روکا گیا، جہاں ووٹ کاسٹ کرنے تھے وہاں پولیس آ گئی تھی۔

ان کا مزید کہنا ہے کہ پولیس جوتے پہن کر ہاؤس میں داخل ہوئی، ایوان ہمارے لیے مقدس ہے، گورنر وفاق کا نمائندہ ہے، ان کے ساتھ جو کیا گیا اس پر صدر خاموش نہیں رہیں گے۔

اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہٰی کا یہ بھی کہنا ہے کہ رات کو چیف سیکریٹری اور آئی جی نے گورنر ہاؤس پر قبضہ کیا، یہ معاملہ خود دیکھوں گا۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published.