Categories
Breaking news

مہنگائی، قرض، کم ٹیکس وصولی حکومتی جرائم ہیں: شہباز شریف

مسلم لیگ نون کے صدر اور قومی اسمبلی میں قائدِ حزبِ اختلاف میاں شہباز شریف کا کہنا ہے کہ مہنگائی، قرض میں اضافہ اور کم ٹیکس وصولی حکومتی جرائم ہیں۔

اسلام آباد میں پارلیمانی پارٹی کے اجلاس سے مسلم لیگ نون کے صدر اور قومی اسمبلی میں قائدِ حزبِ اختلاف میاں شہباز شریف نے خطاب کیا جس کے دوران انہوں نے ٹرین حادثے سے متاثرہ خاندانوں سے دلی ہمدردی اور تعزیت بھی کی۔

اپوزیشن کے شور شرابے میں 8 ہزار 487 ارب روپے کا وفاقی بجٹ پیش

قومی اسمبلی میں اپوزیشن کی جانب سے کیئے جانے والے شور شرابے اور احتجاج کے باوجود وفاقی وزیرِ خزانہ شوکت ترین نے 8 ہزار 487 ارب روپے کا مالی سال 22-2021ء کا وفاقی بجٹ پیش کر دیا۔

انہوں نے کہا کہ ‎آج ملک ایک بار پھر انتہائی برے حالات سے دوچار ہے، ‎ایک طرف معاشی بربادی ہے، تو دوسری طرف بدترین لوڈ شیڈنگ جاری ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ ‎شدید گرمی اور لوڈ شیڈنگ میں بچے بے ہوش ہو رہے ہیں، جس کی حکومت کو پرواہ نہیں ہے، ‎حکومت کو عوام کی بدحالی اور مشکلات سے کوئی دلچسپی نہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ ‎اقتصادی سروے حکومت کے خلاف چارج شیٹ ہے، اس سے صرف مایوسی اور ناکامی ہی نکلی، ‎کھانے پینے کی اشیاء میں 13 فیصد سے زیادہ مہنگائی، قرض میں اضافہ، کم ٹیکس وصولی حکومتی جرائم ہیں۔

کم سے کم تنخواہ 20 ہزار مقرر

قومی اسمبلی میں پیش کیئے گئے مالی سال 22-2021ء کے وفاقی بجٹ میں وفاقی وزیرِ خزانہ شوکت ترین نے بتایا کہ وفاقی سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پنشن میں 10 فیصد اضافہ کیا گیا ہے۔

مسلم لیگ نون کے صدر نے مزید کہا کہ بجلی سمیت ہر چیز مہنگی کرنے کے بعد بھی حکومت کشکول اٹھائے پھر رہی ہے، دوائی، علاج، خوراک اور روزگار سب چھین لیا گیا پھر بھی حکومت کا رونا جاری ہے۔

قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر نے یہ بھی کہا کہ اکنامک سروے حکمرانوں کی 3 سال کی کارکردگی کا بدنما آئینہ ہے، ان 3 سال میں عوام کو بھوک، افلاس اور بے روزگاری کے سوا کچھ نہیں ملا۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *