Categories
Breaking news

مفرور قاتلوں کو ووٹ ڈالنے کیلئے دبئی سے لایا جا رہا ہے: شیخ رشید

وفاقی وزیرِ داخلہ شیخ رشید احمد کا کہنا ہے کہ مفرور قاتلوں کو بھی دبئی سے ووٹ ڈالنے کے لیے لایا جا رہا ہے، اس کا مطلب یہ ہے کہ ان کی کانپیں ٹانگ رہی ہیں۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ناظم جوکھیو کے قتل میں نامزد ایم این اے جام عبد الکریم دبئی سےووٹ ڈالنے آ رہے ہیں، جنہیں وطن واپسی پر گرفتار کریں گے، ان کا نام ای سی ایل اور انٹرپول میں بھی ڈلوائیں گے، ان کی گرفتاری کے سلسلے میں آئی جی سندھ سے بات ہو گئی ہے۔

وزیرِ داخلہ شیخ رشید نے کہا کہ دھرنے کی کسی کو اجازت نہیں، 3 یا 4 اپریل کو عدم اعتماد پر ووٹنگ ہو گی، اپوزیشن کے تمام ارکان کو مکمل پروٹیکشن دیں گے، ان شا ءاللّٰہ عمران خان فتح یاب ہوں گے، اتحادی بھی ہمارے ساتھ ہوں گے، ڈی جی ایف آئی اے کو کہا ہے کہ پاک فوج کے خلاف بولنے والوں کو اٹھائیں۔

ان کا کہنا ہے کہ منحرف ارکان اسلام آباد کے فائیو اسٹار ہوٹلز میں مزے کر رہے ہیں، کسی کو کسی کا راستہ روکنے کی اجازت نہیں دیں گے، ہر کوئی سن لے، کسی نے امن و امان کو ہاتھ میں لیا تو قانون اس کو ہاتھ میں لے گا، ٹکراؤ سے گریز کیا جائے۔

شیخ رشید نے کہا کہ ہماری کوشش ہوگی کہ 7 روز خوش اسلوبی سے گزریں، اپوزیشن نے کوئی غلطی کی تو سزا بھی یہی بھگتیں گے، کل (27 مارچ کو) پریڈ گراؤنڈ میں عوام کا سمندر ہو گا، جس سے عمران خان خطاب کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ کسی کو ریڈ زون میں آنے کی اجازت نہیں ہو گی، اتحادیوں کے ساتھ اور ناراض لوگوں کے ساتھ بھی بات چیت ہو رہی ہے، راولپنڈی کی ریلی پاکستان کی سب سے بڑی ریلی ہو گی، راولپنڈی کا حلقہ وفاداریوں کو پسند کرتا ہے، پنڈی شہر کی ریلی کو میں خود لیڈ کروں گا۔

وزیرِ داخلہ نے کہا کہ دھرنا اگر دیا گیا تو عدالت کی ایڈوائس پر کام کریں گے، اپوزیشن نے عمران خان کو مقبولیت کی معراج پر پہنچا دیا ہے، دھرنے کی کسی کو اجازت نہیں، اگر کسی نے دھرنا دیا تو دھر لیا جائے گا، فوج کو طلب کرنے کا اختیار رکھتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ وزیرِ اعظم عمران خان کو سندھ میں گورنر راج کی تجویز دی، وہ انہوں نے مسترد کر دی، ایمرجنسی کی رائے دی وہ بھی انہوں نے مسترد کر دی، میری رائے ہے کہ مقبولیت کو دیکھتے ہوئے جلد انتخابات کرائے جائیں، میں نے قبل از وقت انتخابات کی تجویز عمران خان کو دی، وزیرِ اعظم نے یہ رائے بھی مسترد کر دی۔

شیخ رشید کا کہنا ہے کہ ابھی تک تو حالات صحیح ہیں، جے یو آئی سرینگر ہائی وے سے اسٹیج ہٹا کر پارکنگ سائیڈ پر لے گئی ہے، تمام پارٹیوں کے راستے کلیئر رکھیں گے، کسی کو کسی کا راستہ روکنے کی اجازت نہیں دیں گے، تحریکِ عدم اعتماد گزر جائے تو بتاؤں گا کہ ملک دشمن عناصر او آئی سی کانفرنس کو کیسے نقصان پہنچانا چاہتے تھے۔

ان کا کہنا ہے کہ وزارتِ داخلہ کو اختیار ہے کہ وزیرِ اعظم اور کابینہ کی منظوری سے آرٹیکل 245 کے تحت فوج کو طلب کر سکتی ہے، اللّٰہ کرے وہ وقت نہ آئے، امید ہے نہیں آئے گا، کوئی ملک دشمن بھی شرارت کر سکتا ہے، ہمیں پوری کوشش کرنی ہے کہ ہم سیاسی طورپر میچیور ہونے کا ثبوت دیں، اگر خدانخواستہ کوئی ٹکراؤ ہو گا تو اس کی رپورٹ ہم نے سپریم کورٹ کو کر دی ہے۔

وزیرِ داخلہ نے کہا کہ آرٹیکل 245 کے تحت انتظامیہ وزراتِ داخلہ کو ایمرجنسی کا لکھتی ہے، وزارتِ داخلہ درخواست وزیرِ اعظم اور کابینہ کو بھیجتی ہے، جن کی منظوری کے بعد ایمرجنسی لگتی ہے، ابھی شیئر نہیں کر سکتا کہ دشمنوں کا ایجنڈا کیا تھا، سری نگر ہائی وے رینجرز اور ایف سی کے حوالے کی ہے۔

شیخ رشید نے یہ بھی کہا کہ جے یو آئی کو صرف آج تک جلسہ کرنے کی ہدایت کی ہے، جے یو آئی اگر کل جلسہ کرے گی تو اسے نئی درخواست دینا ہو گی، ن لیگ نے سری نگر ہائی وے کی اجازت مانگی تھی، اس کی یہ درخواست مسترد کر دی ہے۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published.