Categories
Breaking news

مسجد نبوی واقعے پر پی ٹی آئی رہنما صاحبزادہ جہانگیر کا بیان

مسجد نبویﷺ میں گزشتہ روز پیش آنے والے واقعے پر پی ٹی آئی رہنما صاحبزادہ جہانگیر کا بیان سامنے آگیا۔

صاحبزادہ جہانگیر کا کہنا ہے کہ واقعے کے حوالے سے سوشل میڈیا اور ٹی وی پر میرا اور انیل مسرت کا نام لیا جارہا ہے، میں اور انیل مسرت دو روز پہلے عمرے کے لیے آئے تھے۔

عمران نے سابق مشیر صاحبزادہ جہانگیر کو سیاسی نعرے بازی کے لیے بھیجا، ذیشان ملک

ذیشان ملک نے کہا کہ صاحب زادہ جہانگیر مدینہ منورہ میں موجود تھے، انہوں نے مدینہ روانگی کی تصویر بھی سوشل میڈیا پر شیئر کیں۔

صاحبزادہ جہانگیر نے کہا کہ ایک روز کے لیے مدینہ شریف آئے تھے، ہم نماز پڑھ رہے تھے کہ شاہ زین بگٹی اور مریم اورنگزیب کی آمد پر شور کی آواز آئی۔

پی ٹی آئی رہنما نے کہا کہ انیل مسرت نماز پڑھ رہے تھے میں اٹھ کر آیا کہ دیکھوں کہ شور کیوں مچ رہا ہے؟

صاحبزادہ جہانگیر نے کہا کہ واضح کرنا چاہتا ہوں کہ نہ انیل مسرت نے اس کی فنڈنگ کی اور نہ میں نے آرگنائز کیا، ہمیں نہ پولیس نے پکڑا اور نہ ہی کوئی پوچھ گچھ ہوئی ہے۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published.