Categories
Breaking news

مریم نواز احتجاج میں شرکت کیلئے مری سے اسلام آباد روانہ

Advertisement
مریم نواز احتجاج میں شرکت کیلئے مری سے اسلام آباد روانہ

پاکستان تحریکِ اسلامی (پی ٹی آئی) کے خلاف فارن فنڈنگ کیس کے فیصلے میں تاخیر کے خلاف اپوزیشن اتحاد پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کی جانب سے آج اسلام آباد میں الیکشن کمیشن کے دفتر کے سامنے کیئے جانے والے احتجاج میں شرکت کرنے کے لیے مسلم لیگ نون کی نائب صدر اور سابق وزیرِ اعظم میاں نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز روانہ ہو گئیں۔

Advertisement

مریم نواز مری سے اسلام آباد روانہ ہوئی ہیں، وہ پہلے پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمٰن کی رہائش گاہ پہنچیں گی۔

Table of Contents

x
Advertisement

پی ڈی ایم رہنما مولانا فضل الرحمٰن کی رہائش گاہ پر جمع ہو کر ان کی قیادت میں ایک ساتھ شاہرہ دستورکے لیے روانہ ہوں گے۔

ادھر احتجاج کے لیے پی ڈی ایم میں شامل سیاسی جماعتوں کے کارکن الیکشن کمیشن کے باہر پہنچنا شروع ہو گئے۔

PDM کا احتجاج، الیکشن کمیشن کی سیکیورٹی انتہائی سخت

اپوزیشن اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کی جانب سے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں الیکشن کمیشن کے آفس کے باہر احتجاج کے سلسلے میں سیکیورٹی انتہائی سخت کر دی گئی ہے۔

الیکشن کمیشن کے سامنے احتجاج کرنے کے لیے پی ڈی ایم میں شامل سیاسی جماعتوں کے کارکنوں کا قافلہ نوشہرہ کے رشکئی انٹر چینج سے اسلام آباد کے لیے روانہ ہو گیا۔

خیبر پختون خوا سے جے یو آئی ف اور مسلم لیگ نون کی ریلیوں کی اسلام آباد آمد کا سلسلہ جاری ہے، یہ ریلیاں موٹر وے اور جی ٹی روڈ سے اسلام آباد میں داخل ہو رہی ہیں۔

پاکستان پیپلز پارٹی کی ریلی مل پور سے روانہ ہوئی جس کی قیادت پیپلز پارٹی کے رہنما نیر بخاری اور فیصل کریم کنڈی کر رہے ہیں۔

ممبر قومی اسمبلی طاہرہ اورنگزیب کی قیادت میں خواتین کی ریلی نواز شریف پارک پہنچ گئی جہاں کارکنوں نے شرکاء کا استقبال کیا۔

دوسری جانب پی ڈی ایم رہنماؤں کے خطاب کے سلسلے میں کنٹینر کشمیر چوک پہنچا دیا گیا ہے۔

ادھر اپوزیشن اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کی جانب سے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں الیکشن کمیشن کے آفس کے باہر احتجاج کے سلسلے میں سیکیورٹی انتہائی سخت کر دی گئی ہے۔

اسلام آباد کے ریڈ زون میں سیکیورٹی ہائی الرٹ کر دی گئی ہے، جبکہ اس ضمن میں وزارتِ داخلہ میں کنٹرول روم قائم کر دیا گیا ہے۔

کنٹرول روم میں امن و امان کی صورتِ حال کی مانیٹرنگ کی جائے گی، ریڈ زون کے داخلی اور خارجی راستوں پر پولیس کی بھاری نفری تعینات ہو گی۔

یہ بھی پڑھیے

تمام اہم عمارتوں کی سیکیورٹی کے لیے پولیس اور رینجرز کے اضافی دستے تعینات کیئے گئے ہیں، اس سلسلے میں 1800 سے زائد پولیس جوان سیکیورٹی کے فرائض سر انجام دے رہے ہیں۔

سیف سٹی کے کیمروں کے ذریعے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے ریڈ زون کی مانیٹرنگ کی جا رہی ہے۔

وزارتِ داخلہ کے ذرائع کے مطابق ریلی کے شرکاء کی طرف سے قانون شکنی کی صورت میں سخت ایکشن لیا جائے گا۔

ادھر آئی جی اسلام آباد نے الیکشن کمیشن کا دورہ کر کے سیکیورٹی کی صورتِ حال کا جائزہ لیا۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *