Categories
Breaking news

مائیکل جیکسن بھی نسلی امتیاز کیخلاف آواز اٹھانے والوں میں شامل رہے

Advertisement
Advertisement

معروف امریکی گلوکار مائیکل جیکسن بھی اپنے کیریئر کے دوران سیاہ فام عوام کے ساتھ نسلی امتیاز برتنے پر آواز اٹھایا کرتے تھے۔مائیکل جیکسن کے ہاتھوں 1987 میں لکھا ہوا ایک نوٹ اس وقت سوشل میڈیا پر زیر گردش ہے۔پاپ گلوکاری کے بادشاہ کے خطوط کے مطابق انھوں نے ایم ٹی وی پر سیاہ فام موسیقاروں کو نظر انداز کرنے کا الزام عائد کیا تھا۔مائیکل جیکسن نے سفید فام ایلوس پریسلے کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے لکھا تھا کہ وہ کچھ بھی ہوں، لیکن ’دی کنگ‘ کو دکھائیں گے کہ باس کون ہے۔ معروف انگلش بینڈ دی بیٹلز سے متعلق انھوں نے لکھا کہ ’ہاں وہ اچھے تھے، لیکن وہ سیاہ فام سے زیادہ اچھے گلوکار اور ڈانسر نہیں تھے۔انھوں نے لکھا تھا کہ میں تعصب کا شکار نہیں ہوں، لیکن اب وقت آگیا ہے پہلے سیاہ فام ’کنگ‘ بننے کا۔
مائیکل جیکسن نے اپنے نوٹ میں امریکی سفید فام انتہا پسند گروہ کے کے کے کے نسل پرستانہ جرائم پر بھی بات کی تھی۔انھوں نے لکھا تھا کہ میرا مقصد تھا کہ میں بہت ’بڑا‘ بن جاؤں، بہت طاقت ور، میں ایسا ہیرو بنوں کہ تعصب پسندانہ رویے کو ختم کروں۔مائیکل جیکسن نے یہ بھی لکھا تھا کہ میں چاہتا جوں جو انصاف پسندانہ ہو، میں چاہتا ہوں ہر نسل کو ایک ہی طرح محبت کی جائے۔

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *