Categories
Breaking news

لاہور میں کورونا وائرس ویکسین ٹرائل، کیا اثرات سامنے آئے؟

Advertisement
لاہور میں  کورونا وائرس ویکسین ٹرائل، کیا اثرات سامنے آئے؟

Advertisement

لاہورمیں کورونا وائرس کی تجرباتی ویکسین کا فیز تھری ٹرائل جاری ہے، جس میں ویکسین لگوانے والوں کو مختلف اثرات بھی سامنے آئے ہیں۔

بیجنگ سے آئی ویکسین یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز میں لگائی جا رہی ہے۔

پاکستان نے کورونا وائرس ویکسین کی ایڈوانس بکنگ کا فیصلہ کرلیا

پارلیمانی سیکریٹری صحت نوشین حامد کہتی ہیں کہ پہلے مرحلے پر فرنٹ لائن ورکرز اور 65 سال سے بڑی عمر کے لوگوں کو کورونا وائرس کی ویکسین لگے گی۔

امریکا میں کورونا وائرس کی ویکسین کی فراہمی شروع

امریکی دوا ساز کمپنی فائزر نے کورونا وائرس سے بچاؤ کی ویکسین کے ڈلیوری پائلٹ پروگرام کا آغاز کر دیا۔

x
Advertisement

یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کے اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر شاہ نور اظہر کے مطابق ٹرائل ویکسین 900 سے زائد افراد لگوا چکے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ ٹرائل میں ہر عمر کے افراد حصہ لے رہے ہیں، ویکسین لگانے والے افراد میں 5 فیصد کو معمولی بخار ہوا ہے۔

یہ بھی پڑھیے

یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کے اسسٹنٹ پروفیسر کا مزید کہنا ہے کہ ویکسین لگنے کے 4 ہفتے بعد جسم میں اینٹی باڈیز بننا شروع ہوتی ہیں۔

ڈاکٹر شاہ نور کا یہ بھی کہنا ہے کہ اس ویکسین کے 2 کامیاب تجربات ہو چکے ہیں، ماسک پہننا اور بار بار ہاتھ دھونے کا عمل جاری رکھنا لازم ہے۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *