Categories
Breaking news

ق لیگ کی پارلیمانی پارٹی نے فیصلوں کا اختیار پرویز الہٰی کو دیدیا

وفاق اور پنجاب حکومت سے ناراض اتحادی جماعت پاکستان مسلم لیگ (ق) کی پارلیمانی پارٹی نے تمام فیصلوں کا اختیار پرویز الہٰی کو دے دیا ہے۔

ق لیگ نے پارلیمانی پارٹی کے اجلاس کا اعلامیہ جاری کردیا جس میں کہا گیا کہ بڑھتی بیروزگاری اور مہنگائی کے باعث حکومت کے ساتھ چلنا مشکل ہوتا جارہا ہے۔

ق لیگ اجلاس کے اعلامیے کے مطابق پارٹی کے پارلیمانی ارکان نے فیصلوں کا اختیار پرویز الہٰی کے سپرد کردیا ہے۔

اعلامیے کے مطابق پارلیمانی پارٹی اجلاس میں ق لیگ کے ارکان اسمبلی نے بڑھتی بیروزگاری اور مہنگائی پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔

اجلاس میں ڈالر، پٹرول، بجلی، گیس کی بڑھتی قیمتوں اور امن و امان کی ابتر صورتحال پر تشویش ظاہر کی گئی۔

ق لیگی رہنما نے مزید کہا کہ ان تمام وجوہات کی بنا پر حکومت کے ساتھ چلنا مشکل ہوتا جارہا ہے، عوامی نمائندے اپنے حلقوں میں عوام کا سامنا کیسے کریں۔

اعلامیے کے مطابق عام آدمی اذیت میں ہے، حکومت عوامی مشکلات کے تدارک میں ناکام دکھائی دیتی ہے اور نان ایشوز کو ایشوز بنا کر عام آدمی کے زخموں پر نمک چھڑک رہی ہے۔

ق لیگی پارلیمانی اجلاس کے اعلامیے کے مطابق عام آدمی کو ریلیف نہ دیا گیا تو حالات مزید بگڑیں گے، حکومت سنجیدگی سے ان تمام ایشوز کا فوری ازالہ کرے۔

اجلاس میں وفاقی وزراء طارق بشیر چیمہ، مونس الہٰی اور سینیٹر کامل علی آغا، ارکان قومی اسمبلی میں سے سالک حسین، حسین الہٰی اور مسز فرخ خان نے شرکت کی۔

پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں صوبائی وزراء حافظ عمار یاسر، باؤ رضوان، ارکان پنجاب اسمبلی میں سے ساجد احمد خان بھٹی، احسان الحق چوہدری، ڈاکٹر محمد افضل، شجاعت نواز اجنالہ، خدیجہ عمر اور عبداللہ یوسف وڑائچ بھی شریک ہوئے۔

اجلاس میں خیبر پختون خوا اسمبلی کے رکن مفتی عبیدالرحمان اور ق لیگی رہنما شافع حسین نے بھی موجود تھے۔

اجلاس کے شرکاء نے پارٹی سربراہ چوہدری شجاعت حسین کی صحت یابی کے لیے دعا کی۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published.