Categories
Breaking news

قیدی سیاستدانوں کی معافی تیار مگر ہسپانوی حکومت تنقید کی زد میں

میڈرڈ (محمد نبی) ہسپانوی حکومت قیدی سیاست دانوں کی معافی کی منظوری دینے کے لیے تیار ہے۔ ہسپانوی وزیراعظم کے مطابق اس اقدام کو منگل تک حتمی شکل دے دی جائے گا۔ سوشلسٹ پارٹی (PSOE) کے رہنما نے یہ اعلان پیر کے روز علاقے کے لیے اپنے لائحہ عمل کی تقریر کے دوران کیا۔ ان کی تقریر کا عنوان Reencuentro: un proyecto de futuro para toda España یعنی “دوبارہ یکجا ہونا: سارے اسپین کے لیے مستقبل کا منصوبہ” تھا جس کا انعقاد بارسلونا کے Liceu تھیئٹر میں ہوا۔ تقریب میں کاتالان حکومت کے ارکان کے علاؤہ لگ بھگ 300 افراد نے شمولیت کی تھی۔

اس موقع پر سانچیز نے اپنی تقریر میں کہا “وبا نے یہ بات ہمیں یاد دلائی ہے کہ ہمیں ایک دوسرے کی ضرورت ہے۔ ایک معاہدے تک پہنچنے کے لیے کسی نہ کسی نے پہلا قدم اٹھانا ہوتا ہے۔ ہم احترام اور مروت سے معاشرتی ہم آہنگی کی تشکیل نو کر رہے ہیں۔ہم ابتدا سے شروعات نہیں کر سکتے لیکن ہم دوبارہ شروعات ضرور کر سکتے ہیں۔ کاتالونیا ہم آپ سے محبت کرتے ہیں۔”

ایک طرف سے سانچیز اپنے اقتدار کا سب سے مشکل فیصلہ کرنے جا رہے ہیں تو دوسری طرف وہ ہر طرف سے تنقید کی زد میں ہیں۔ کاتالونیا دورے کے موقع پر خود علیدگی پسند کیمپ کی طرف سے مخالفت کا سامنا ہوا۔ انہوں نے معافی کو ڈھونگ اور دکھاوا قرار دیا۔

منگل کے روز اہم حزب اختلاف پاپولر پارٹی کے رہنما اسابیل دیاز (Isabel Díaz) نے کہا کہ سانچیز کا سیاسی مستقبل ختم ہو رہا ہے۔ ان کی دغا بازی کو معاف نہیں کیا جا سکتا اور اس کے دن گنے جا چکے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ عوام کچھ خطاؤں کو معاف کر سکتے ہیں مگر یہ ناقابل معافی جرم ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *