Categories
Breaking news

علامہ خادم رضوی کے انتقال اور پھر سانسیں بحال ہونے کی خبریں، کنفیوژن کیوں پیدا ہوئی؟

Advertisement
Advertisement

علامہ خادم رضوی کے انتقال اور پھر سانسیں بحال ہونے کی خبریں، کنفیوژن کیوں پیدا ہوئی؟

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) تحریک لبیک پاکستان کے سربراہ علامہ خادم حسین رضوی کے انتقال کے بارے میں 2 متضاد اطلاعات سامنے آنے پر لوگوں میں کنفیوژن پیدا ہوئی۔

علامہ خادم حسین رضوی کے بارے میں پہلے یہ خبر سامنے آئی کہ ان کا انتقال ہوگیا ہے لیکن بعد میں یہ دعوے بھی سنے گئے کہ ان کی سانسیں بحال ہوگئی ہیں اور انہیں دوبارہ ہسپتال منتقل کیا جارہا ہے۔ 2 متضاد خبریں سامنے آنے کے بعد پورے ملک میں کنفیوژن پیدا ہوئی۔ اب اس بارے میں وضاحت ہوگئی ہے کہ علامہ خادم حسین رضوی کا انتقال ہوگیا ہے۔ یہاں سوال پیدا ہوتا ہے کہ اصل کہانی کیا ہے اور متضاد اطلاعات سامنے کیوں آئیں؟

دوران ڈرائیونگ موبائل پر گیم کھیلنے والا ڈرائیور گرفتار ، یہ کون ہے؟

نجی ٹی وی سٹی 42 کے مطابق علامہ خادم حسین رضوی کو طبیعت خراب ہونے پر جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب پونے 9 بجے کے قریب شیخ زید ہسپتال منتقل کیا گیا تاہم وہ راستے میں ہی اپنی جان جانِ آفریں کے سپرد کرچکے تھے۔ شیخ زید (سرکاری) ہسپتال کے ڈاکٹرز نے ان کی موت کی تصدیق کی لیکن کارکنوں نے علامہ خادم حسین رضوی کے انتقال کا یقین نہ کیا اور ان کی میت کو علامہ اقبال ٹاؤن میں واقع پرائیویٹ ادارے فاروق ہسپتال لے گئے ۔ یہاں کے ڈاکٹرز نے بھی تحریک لبیک کے سربراہ کی موت کی تصدیق کی جس کے بعد ان کی میت کو گھر لے جایا گیا۔

علامہ خادم رضوی کے زندہ ہونے کی خبریں میت کا مذاق اڑانے کے لئے پھیلائی جا رہی ہیں،جماعت اسلامی کے رہنما نے ڈیتھ سرٹیفکیٹ شیئر کردیا

علامہ خادم رضوی کے صاحبزادے کا کہنا ہے کہ چند سیکنڈز کے لئے ایسا محسوس ہوا تھا کہ ان کا ہاتھ ہلا ہے تاہم ڈاکٹرز کی ٹیم نے فوری طور پر دوبارہ معائنہ کرتے ہوئے علامہ خادم رضوی کے انتقال کی تصدیق کردی ہے۔

مزید :

Breaking Newsعلاقائیپنجابلاہور

Original Article

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *