Categories
Breaking news

عالمی وبا کورونا وائرس2022 میں ختم ہو جائے گی: بل گیٹس

Advertisement
Advertisement

عالمی وبا کورونا وائرس2022 میں ختم ہو جائے گی

مائیکروسوفٹ کمپنی کے بانی بل گیٹس نے کہا ہے کہ عالمی وبا کورونا وائرس2022 میں ختم ہو جائے گی اور یہ وبائی مرض غیر معینہ مدت تک نہیں چلے گا۔

فاکس نیوز کو دیئے گئے انٹرویو میں بل گیٹس نے کہا امید ہے کہ2021 میں زندگی معمول پر آجائے اور ویکسین کے استعمال سے امریکہ میں کیسز بھی کم ہو جائیں گے۔

بل گیٹس نے کورونا وبا سے نمٹنے کیلئے دنیا کو650 ملین ڈالر کی امداد دی ہے جو کہ کسی بھی انفرادی شخص کی جانب سے دی گئی سب سے زیادہ امداد ہے۔ اس رقم کو ویکسین بنانے اور غریب ممالک تک پہنچانے میں استعمال کیا جائے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ دنیا بھر میں وبائی مرض کا خاتمہ کرنے کے ساتھ اس بات کو بھی یقینی بنانا ہوگا کہ یہ دوبارہ نہ آئے۔

انٹرویو کے دوران بل گیٹس کا کہنا تھا کورونا وائرس کی ویکسین2021 کے آغاز میں تیار ہونے کی امید ہے۔

مائیکروسوفٹ کے بانی کا کہنا تھا کہ اگر عالمی سطح پر یکساں اقدامات کیے جائیں تو2021 میں کیسز کی تعداد کافی کم ہو سکتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ایک بار ویکسین تیار ہوگئی تو پھر ہمیں اس کی بلا تفریق فراہمی کو یقینی بنانا ہوگا اور صرف امیروں کو تقسیم کرنے سے وبا ختم نہیں ہوگی۔

بل گیٹس نے کہا کہ کورونا وائرس کے دوران ترقی پذیر ممالک میں ویکسینیشن کی شرح میں 14 فیصد کمی واقع ہوئی ہے۔ پہلی بار غربت بڑھ رہی ہے جس سے تعلیم اور ذہنی صحت پر مضر اثرات مرتب ہوئے ہیں۔

خیال رہے کہ گزشتہ ماہ عالمی ادارہ صحت کے سربراہ نے بھی امید ظاہر کی ہے کہ کورونا وائرس دو سالوں کے اندر ختم ہو جائے گا۔

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *