Categories
Breaking news

عالمی ادارۂ صحت کا کورونا کے دو نئے طریقہ علاج کی منظوری کا علاج

عالمی ادارہِ صحتعالمی ادارۂ صحت (ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن) نے کورونا انفیکشن کے دو عدد نئے طریقہ علاج کی منظوری دے دی ہے۔

ڈبلیو ایچ او نے کورونا کے شدید انفیکشن میں مبتلا مریضوں کے لیے دو ادویات کے مرکب پر مبنی علاج کی منظوری دے دی۔

برٹش میڈیکل جرنل کے مطابق ماہرین کا کہنا ہے کہ جوڑوں کے درد کی دوا باریسیٹینیب (baricitinib) کو ایک اور دوا کورٹیکوسٹیرائیڈز (corticosteroids) کے ساتھ کرونا کے شدید مریضوں کے علاج کے لیے استعمال کیا جا سکتا ہے۔

طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ اس دوا کے استعمال سے انفیکشن میں مبتلا مریضوں کے زندہ رہنے کے امکانات میں اضافہ ہوتا ہے اور وینٹی لیٹرز کی ضرورت کم ہو جاتی ہے۔

طبی ماہرین نے کم مدافعت رکھنے والے افراد کے لیے مصنوعی اینٹی باڈی ٹریٹمنٹ سوٹروویمیب Sotrovimab کی بھی سفارش کی ہے۔

تاہم عالمی ادارۂ صحت نے کہا ہے کہ اومیکرون ویرینٹ کے خلاف اس علاج کی تاثیر ابھی تک غیر یقینی ہے۔ بدھ کو ڈبلیو ایچ او کے سربراہ ٹیڈروس اذانوم گیبریئس نے کہا تھا کہ اومیکرون ڈیلٹا کے مقابلے میں کم شدید بیماری کا سبب بنتا ہے، لیکن یہ ایک خطرناک وائرس ہے – خاص طور پر ان لوگوں کے لیے جو ویکسین نہیں لگا رہے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.