Categories
Breaking news

ضلع کوہاٹ میں خواجہ سرا کے چکر میں لڑائی، 5 افراد ہلاک

Advertisement

ضلع کوہاٹ میں ایک خواجہ سرا چاہت کے پیچھے لڑائیوں میں پانچ افراد جاں بحق اور تین زخمی ہوگئے، 9 نومبر کو دو گروپوں میں لڑائی چاہت کے لیے ہوئی تھی۔

Advertisement

Table of Contents

x
Advertisement

وزیر اعلیٰ کے مشیر ضیاء اللّٰہ بنگش نے چاہت کو ضلعے سے نکالنے کی ہدایت کردی، چاہت کو اس کے ساتھیوں سمیت کوہاٹ سے نکالنے کے فیصلے کے خلاف خواجہ سراء سراپا احتجاج ہیں۔

کوہاٹ میں 9 نومبر کو شادی کی ایک تقریب میں فائرنگ سے پانچ افراد جاں بحق اور تین زخمی ہوگئے تھے۔

وزیر اعلیٰ کے مشیربرائے سائنس ایند ٹیکنالوجی ضیاء اللّٰہ بنگش نے چاہت نامی خواجہ سراء کو اس واقعہ کا قرار دیتے ہوئے ضلعی انتظامیہ اور پولیس کو اسے کوہاٹ سے نکالنے کی ہدایت کی۔

چاہت کو اس کے ساتھیوں سمیت کوہاٹ سے نکالنے کے فیصلے کے خلاف خواجہ سراء سراپا احتجاج ہیں۔ انکا الزام ہے کہ چاہت کے گھر کو تالہ لگا کر اسے نکال دیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیے

دوسری جانب ڈی سی کوہاٹ کا کہنا ہے کہ کوہاٹ میں خواجہ سراؤں پر ابھی تک کوئی پابندی عائد نہیں کی گئی ہے، جبکہ صوبائی حکومت کو بتا دیا ہے کہ واقعہ کی تحقیقات کے لئے کمیٹی تشکیل دیدی گی ہے اگر خواجہ سراؤں کی وجہ سے ایسے واقعات رونما ہونے کی بات ثابت ہوگئی تو ان پر پابندی عائد کریں گے۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *