Categories
Breaking news

صحت کارڈ سے بیٹے کا علاج نہ ہونے پر شہری کا عدالت کو خط

صحت کارڈ سے بیٹے کا علاج نہ ہونے پر  شہری کا عدالت کو خط

قومی صحت کارڈ پر بیٹے کے علاج سے انکار کرنے پر شہری نے چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ کو خط لکھ دیا۔

چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ نے نوٹس لیتے ہوئے خط کو پٹیشن میں تبدیل کردیا اور سیکرٹری صحت کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 13 اپریل تک جواب طلب کرلیا۔

عدالت نے ڈپٹی اٹارنی جنرل سید طیب کو ہدایت دیتے ہوئے کہا ہے کہ معاملہ دیکھ کر رپورٹ جمع کرائیں۔

شہری کی ہاتھ سے لکھی گئی درخواست میں مؤقف اپنایا گیا کہ میں نواز شریف یا زرداری نہیں غریب پاکستانی ہوں، میرا بیٹا ایف ایس سی کا طالب علم ہے جو کہ اب بیماری کے باعث بیڈ پر آگیا ہے۔

درخواست میں مزید کہا گیا کہ اس بیماری کو صرف انجکشن ہی روک سکتا ہے جو بہت مہنگا ہے، جتنا میرے بس تھا انجکشن لگوا لیے، اب پمز سے ہیلتھ کارڈ پر انجکشن نہیں مل رہے، آپ ہماری امید کی آخری کرن ہیں ان کو حکم دیں۔

شہری نے درخواست میں استدعا کی کہ میرے پاس کوئی راستہ نہیں کہ بیٹے کیساتھ کورٹ میں آکر خودکشی کرلوں، دو سالوں سے دربدر پھر رہا ہوں، پمز کو حکم دیں صحت کارڈ پر علاج کرے۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *