Categories
Breaking news

شیخ رشید مسجد نبویؐ واقعے میں بے گناہ قرار

فائل فوٹو
فائل فوٹو

لاہور ہائی کورٹ راولپنڈی بینچ نے سابق وفاقی وزیر شیخ رشید کو مسجد نبویؐ واقعے میں بے گناہ قرار دے دیا۔

جسٹس چوہدری عبدالعزیز نے مسجد نبویؐ کے افسوسناک واقعے پر شیخ رشید کے خلاف درج مقدمے پر سماعت کی۔

تفتیشی افسر نے شیخ رشید اور راشد شفیق کو توہین مذہب مقدمے میں بے گناہ قرار دے دیا۔

مسجد نبویؐ واقعہ: ویڈیو میں موجود افراد کا ریکارڈ پیش کرنے کا حکم

لاہور ہائی کورٹ راولپنڈی بینچ نے عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید کے خلاف مسجدِ نبویﷺ واقعے پر اٹک میں درج ایف آئی آر خارج کرنے کی درخواست پر سماعت کرتے ہوئے ایک ہفتے میں واقعے کی فوٹیج میں نظر آنے والے تمام افراد کا ریکارڈ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

عدالت نے شیخ رشید اور شیخ راشد شفیق کی جانب سے دائر درخواستیں مقدمہ خارج کرنے نمٹا دی۔

عدالت نے شیخ رشید اور راشد شفیق کو درج مقدمات سے متعلق ٹرائل کورٹ سے رجوع کرنے کا حکم دے دیا۔

واضح رہے کہ گزشتہ سماعت میں لاہور ہائی کورٹ راولپنڈی بینچ نے عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید کے خلاف مسجدِ نبویﷺ واقعے پر ایک ہفتے میں واقعے کی فوٹیج میں نظر آنے والے تمام افراد کا ریکارڈ پیش کرنے کا حکم دیا تھا۔

لاہور ہائی کورٹ راولپنڈی بینچ نے قرار دیا تھا کہ مسجد نبویﷺ واقعے میں ملوث دیگر ملزمان کی گرفتاری تک شیخ رشید کا مقدمہ خارج نہیں کریں گے۔

مسجدِ نبوی ﷺ میں کیا واقعہ پیش آیا؟

واضح رہے کہ 28 اپریل کو سیاسی مخالفت کے جنون میں مذہبی مقام کے تقدس کی پامالی کا واقعہ پیش آیا تھا، وفاقی وزیرِ اطلاعات مریم اورنگزیب اور وفاقی وزیرِ نارکوٹکس کنٹرول نوابزادہ شاہ زین بگٹی کی مسجدِ نبوی ﷺ آمد کے موقع پر بے ہودہ آوازیں کسی گئیں۔ دونوں وزراء کو غدار اور چور کہہ کر ان کا پیچھا کیا گیا۔

مسجد نبوی میں نازیبا الفاظ کا الزام، 5 پاکستانی شہری مدینہ منورہ میں گرفتار

مسجد نبوی صلی اللہ علیہ وسلم کے احاطے میں نازیبا الفاظ کے الزام میں 5 پاکستانی شہری گرفتار کرلیے گئے۔

نوبت یہاں تک پہنچی کہ ایک شخص نے نوابزادہ شاہ زین بگٹی کے سر کے بال نوچ لیے۔

مریم اورنگزیب اور شاہ زین بگٹی مسجد نبویﷺ کے احترام میں خاموشی سے آگے بڑھتے رہے اور مریم اورنگزیب سر نیچا کیے رہیں۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *