Categories
Breaking news

سوچنے کی ضرورت ہے کہ ملک مقدم ہے یا شخصیت اہم ہے؟ شاہ محمود قریشی

سوچنے کی ضرورت ہے کہ ملک مقدم ہے یا شخصیت اہم ہے؟ شاہ محمود قریشی

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ سوچنے کی ضرورت ہے کہ ملک مقدم ہے یا شخصیت اہم ہے؟

ملتان میں میڈیا سے گفتگو میں شاہ محمود قریشی نے کہا کہ اپوزیشن جماعت ن لیگ میں 2 سوچیں پیدا ہوچکی ہیں، ایک مریم نواز کی دوسری شہباز شریف کی سوچ ہے۔

انہوں نے کہا کہ سینیٹ الیکشن میں بھی 2 سوچیں سامنے آئیں اور آج اپوزیشن اتحاد پی ڈی ایم میں واضح تقسیم ہے، سیاست میں راستے نکالے جاتے ہیں۔

وزیر خارجہ نے مزید کہاکہ افغانستان کے عوام امن چاہتے ہیں، پاکستان اس معاملے میں مثبت کردار ادا کرنے سے زیادہ کچھ نہیں کرسکتا۔

شاہ محمود قریشی نے یہ بھی کہا کہ فلسطین اور کشمیر کے موقف میں یکسانیت ہے، ہم بھارت کے ساتھ امن سے رہنا چاہتے ہیں۔

اُن کا کہنا تھاکہ بھارت کشمیر کے مسئلے کو سمجھے، فیصلے پر نظرثانی کرے، نئی دہلی اپنے فیصلے واپس لینے کا کوئی روڈ میپ دے تو بات ہوسکتی ہے۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ ڈھائی برس میں فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (فیٹف) کے معاملے پر بہت کام کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ کوئی ٹیکنیکل وجہ نہیں کہ پاکستان کو گرے لسٹ میں رکھا جائے، امید ہے ہم جلد اس سے نکل جائیں گے۔

شاہ محمود قریشی نے پانی کے مسئلے پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ پانی کے مسئلے پر صوبے ایک دوسرے پر الزامات لگا رہے ہیں، تمام صوبے پانی کے معاہدے کے مطابق عمل کریں۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *