Categories
Breaking news

سندھ: 1302 ویکسینیٹر کی بھرتیاں غیر قانونی قرار

Advertisement
سندھ: 1302 ویکسینیٹر کی بھرتیاں غیر قانونی قرار

سندھ ہائی کورٹ نے نومبر 2019ء میں ہونے والی 1 ہزار 302 ویکسینیٹرز کی بھرتیوں کے خلاف درخواست کی سماعت کرتے ہوئے تمام ویکسینیٹرز کی بھرتیاں غیر قانونی قرار دے دیں۔

Advertisement

عدالتِ عالیہ نے ان اسامیوں پر نئے سرے سے دوبارہ انٹرویوز لینے کا حکم دے دیا۔

سندھ حکومت کا حفاظتی ٹیکوں کیلئے 3723 ویکسینیٹرز بھرتی کرنے کا فیصلہ

چیف سیکریٹری سندھ سید ممتاز علی شاہ کی زیر صدارت اہم اجلاس ہوا، جس میں محکمہ صحت، ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن (ڈبلیو ایچ او) اور یونیسیف کے نمائندوں نے شرکت کی۔

x
Advertisement

سندھ ہائی کورٹ نے حکم دیتے ہوئے یہ بھی کہا ہے کہ سندھ حکومت ویکسینیٹرز کے لیے ٹریننگ انسٹیٹیوٹ بھی قائم کرے۔

درخواست گزار نے عدالت میں مؤقف اختیار کیا تھا کہ ویکسینیٹرز کی بھرتی کے لیے 2018ء میں اشتہار جاری کیا گیا تھا، جس کے سلسلے میں 60 سے کم نمبر حاصل کرنے والوں کو بھی یو سی کی سطح پر بھرتی کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیے

درخواست گزار کا یہ بھی کہنا تھا کہ این ٹی ایس ٹیسٹ میں 60 سے زائد نمبر لینے والوں کو بھرتی کیا جانا تھا۔

درخواست اختر حسین، قادر بخش اور دیگر کی جانب سے دائر کی گئی۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *