Categories
Breaking news

سندھ پولیس نے جبر کے سامنے جھکنے سے انکار کیا: مریم نواز

Advertisement

سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی اور مسلم لیگ ن کی مرکزی نائب صدر مریم نواز

سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی اور مسلم لیگ ن کی مرکزی نائب صدر مریم نواز کا کہنا ہے کہ سندھ پولیس نے دھونس اور جبر کے سامنے جھک جانے سے انکار کیا۔

مسلم لیگ ن کی مرکزی نائب صدر مریم نواز نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر سندھ پولیس کی تعریف کرتے ہوئے لکھا کہ ’شاباش سندھ پولیس ہمیں آپ پر فخر ہے۔‘

Advertisement

I salute the Sindh Police!
“If you want to raise the prestige and greatness of Pakistan, you must not fall victim to any pressure,but do your duty as servants to the people and the State,fearlessly and honestly”
Quaid-e-Azam Muhammad Ali Jinnah’s speech to Civil Servants (1948)

— Maryam Nawaz Sharif (@MaryamNSharif) October 20, 2020

مریم نواز نے کہا کہ عوام خوف کی زنجیریں توڑ رہے ہیں یہ دیکھ کر بہت خوشی ہوئی، لوگوں کا آئین کی بالادستی کے لیے کھڑا ہونا خوش آئند ہے۔

انہوں نے لکھا کہ اپنے گمشدہ حقوق کو واپس لینے کی عوام کی کوشش قابل تحسین ہے، سازش اور سازشی عناصر بری طرح بے نقاب ہوگئے ہیں۔

مریم نواز نے بلاول بھٹو کے دو ٹوک موقف اور حمایت پر شکریہ ادا کیا اور کہا کہ پاکستان بدل چکا ہے، اداروں کو تباہ کرنے کا راگ الاپنے والوں کو یہ اچھے سے پتا چل گیا ہوگا۔

واضح رہے کہ اس سےقبل بلاول بھٹو نے پریس کانفرنس کے دوران آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ، ڈی جی آئی ایس آئی سےکراچی واقعے کی تحقیقات کا مطالبہ کیا تھا۔

It’s heartening to see civilians breaking shackles of fear, standing up for supremacy of constitution & reclaiming their long lost rights. The conspiracy & conspirators stand badly exposed. Thank you @BBhuttoZardari for your support & clear stance. Pakistan has changed ??

— Maryam Nawaz Sharif (@MaryamNSharif) October 20, 2020

بلاول نے سوال کیا تھا کہ کون تھے وہ دو لوگ کو آئی جی کو صبح 4 بجے گھر سے لیکر گئے تھے، سب افسران سوال کررہےہیں کون تھےجوآئی جی سندھ کےگھرپرگئے۔

ان کا کہنا تھا کہ قائداعظم کے مزار پر ایک نعرہ لگانے پر اتنا بڑا ایشو بنایا گیا، ایسی کیا ضرورت پڑگئی کہ صبح 4 بجے آئی جی سندھ کو گھر سے لے گئے، اگر پولیس پر دباؤ ڈالا جائے گا تو وہ اپنا کام کیسے کرے گی۔

بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ پولیس پر دباو ناقابل برداشت ہے، آئی جی سندھ کے ساتھ جو واقعہ پیش آیا ہے اس کی بھی تحقیقات ہونی چاہیے۔

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *