Categories
Breaking news

سندھ حکومت کی سول کورٹ آرڈیننس 1962 میں ترمیم کی تجویز

Advertisement
سندھ حکومت کی سول کورٹ آرڈیننس 1962 میں ترمیم کی تجویز

سندھ حکومت نے محکمہ قانون کے ذریعے سندھ ہائی کورٹ کو اہم تجویز دے دی ہے۔

محکمہ قانون کے مطابق سندھ حکومت نے سول کورٹ آرڈیننس 1962 میں ترمیم کی تجویز دی ہے۔

Table of Contents

x
Advertisement

محکمہ قانون نے ترمیم سے متعلق اتفاق رائے کے لیے ہائی کورٹ کے رجسٹرار کو آگاہ کردیا ہے۔

محکمہ قانون کے مطابق سندھ حکومت سول کورٹ آرڈیننس 1962ء میں ترمیم کےلیے چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ کی اتفاق رائے کی خواہاں ہے۔

قانون کے مطابق ڈیڑھ کروڑ تک مالیت کے سول مقدمے کی کارروائی ضلعی عدالتوں میں کی جاتی ہے۔

نئی تجویز ہے کہ ساڑھے 6 کروڑ تک کی مالیت کے مقدمے کی کارروائی ضلعی عدالتوں میں کی جائے۔

اس وقت ڈیڑھ کروڑ سے زائد رقم کے سول مقدمے کی کارروائی سندھ ہائیکورٹ میں کی جاتی ہے۔

محکمہ قانون کے مطابق کراچی بار نے سول مقدمے کی رقم بڑھانے کی قرار داد منظور کی تھی، جس کی روشنی میں ترمیم کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *