Categories
Breaking news

سندھ اسمبلی میں طلبہ یونینز پر بابندی ختم کرنے کا بل متفقہ طور پر منظور

سندھ اسمبلی میں طلبہ یونینز پر بابندی ختم کرنے کا بل متفقہ طور پر منظور

سندھ اسمبلی نے 38 سال سے عائد طلبہ یونینز پر بابندی ختم کرنے کا بل متفقہ طور پر منظور کرلیا۔

ایوان میں طلبہ یونین سے متعلق مجوزہ بل قائمہ کمیٹی برائے قانون سے منظوری کے بعد پیر مجیب الحق نے پیش کیا۔

طلبہ یونین کے بل کی متفقہ طور پر منظوری کے بعد قائد ایوان مراد علی شاہ نے سب جماعتوں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ بل میں طلبہ یونین سے متعلق قواعد ہیں، امید ہے کہ طلبہ یونین تدریسی عمل کو متاثر یا بند نہیں کروائیں گی۔

وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا کہ ڈکٹیٹر کے دور میں طلبا یونین پر پابندی لگائی گئی، میں نے طلبا یونین کا آخری دور دیکھا ہے۔

مراد علی شاہ نے کہا کہ جماعت اسلامی نے اس معاملے پر بہت تعاون کیا، اپوزیشن جماعتوں نے بھی اس کی حمایت کی ہے۔

سندھ اسمبلی سے منظور شدہ بل کے مطابق طلبہ انتخابات سے 7 سے 11 نمائندوں پرمشتمل یونین کومنتخب کریں گے اور تعلیمی اداروں میں ہر سال طلبہ یونین کے انتخابات ہوں گے۔

بل میں کہا گیا ہے کہ تعلیمی ادارے کی سینیٹ اور سنڈیکٹ میں طلبہ یونین کی نمائندگی ہوگی جبکہ تعلیمی ادارے کی انسداد ہراساں کمیٹی میں بھی یونین کی نمائندگی ہوگی۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *