Categories
Breaking news

سشانت خودکشی کیس میں اہم گرفتاری، تحقیقاتی ادارے کا سب سے بڑی کامیابی کا دعویٰ

بھارت کے انسدادِ منشیات کے ادارے این سی بی نے آنجہانی اداکار سشانت سنگھ راجپوت کی خودکشی کے بعد اس کیس میں ڈرگز سے متعلق جاری تحقیقات میں بڑی کامیابی ملنے کا دعویٰ کردیا۔ بھارتی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق بالی ووڈ میں ڈرگز مافیا اور اسٹارز کو ڈرگز کی فراہمی سے متعلق کیس میں این سی بی نے ریجیل ماہاکال نامی ایک ڈرگ ڈیلر کو گرفتار کیا ہے، جس کے قبضے سے ڈھائی کروڑ روپے کی ڈرگز بھی برآمد ہوئی ہے۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق تحقیقاتی اداروں کی جانب سے اس گرفتاری کو اب تک کی سب سے بڑی کامیابی قرار دیا جارہا ہے اور یہ دعویٰ کیا جارہا ہے کہ انھوں نے بالی ووڈ میں ڈرگز سپلائی چین توڑ دی ہے۔ واضح رہے کہ رواں برس جون میں اداکار سشانت سنگھ راجپوت ممبئی میں اپنے گھر میں مردہ حالت میں پائے گئے تھے۔ ابتدا میں پولیس نے اسے خودکشی قرار دیا تاہم جب انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کی جانب سے آنجہانی اداکار کی مالی بے ضابطگیوں سے متعلق تحقیقات کا آغاز کیا تو اس دوران تفتیش کاروں کو سشانت کے موبائل فون میں ڈرگز سے متعلق بات چیت ملیں۔
انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کی جانب سے جب یہ معلومات این سی بی کو فراہم کی گئیں تو اس کیس میں منشیات سے متعلق تحقیقات کا آغاز ہوا جو بالی ووڈ میں ڈرگز مافیا تک جاپہنچا۔ این سی بی کی جانب سے سشانت سنگھ راجپوت کو ڈرگز دینے کے الزام میں آنجہانی اداکار کی سابقہ گرل فرینڈ ریاچکرورتی کو گرفتار کیا گیا تھا، تاہم انھیں بعد میں ضمانت پر رہا کردیا گیا۔اب حالیہ گرفتاری کے بعد این سی بی حکام نے میڈیا کو تصدیق کی کہ انھوں نے ریجیل ماہاکال کو گرفتار کیا ہے جو اعظم شیخ نامی ڈرگ ڈیلر سے منشیات لے کر آگے سپلائی کرتا تھا۔ انھوں نے یہ بھی بتایا کہ ریجیل ماہاکال انوج کیشوانی کو ڈرگز بیچتا تھا جس سے آگے کائیزان نامی شخص کو یہ ڈرگز بیچی جاتی تھی اور یہ کائیزان ریا چکرورتی اور اس کے بھائی شووِک چکرورتی کو ڈرگز بیچا کرتا تھا۔ این سی بی حکام نے یہ بھی دعویٰ کردیا کہ انھوں نے بولی ووڈ میں ڈرگز مافیا کی یہ سپلائی چین توڑ دی ہے۔

Advertisement
Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *