Categories
Breaking news

سرینا عیسیٰ کا وزارت داخلہ کو خط، گھر میں گھس کر باز پرس کرنے والوں کا ذکر

فائل فوٹو
فائل فوٹو

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی اہلیہ سرینا عیسیٰ نے وزارت دفاع، داخلہ اور سندھ حکومت کو خط لکھ دیا، جس میں انہوں نے گھر میں کچھ لوگوں کے داخل ہونے اور باز پرس کرنے کا ذکر کیا ہے۔

سرینا عیسیٰ نے اپنے خط میں کہا کہ وہ 29 دسمبر کو کراچی ڈیفنس کے اپنے مکان میں رنگ و روغن کی نگرانی کر رہی تھیں، اچانک دو افراد گھر میں داخل ہوئے اور کہا کہ وہ انٹیلی جنس سے ہیں۔

خط کے متن میں کہا گیا ہے کہ اہلکاروں نے 4 صفحات دیے اور ذاتی معلومات طلب کیں، دستاویزات پر کسی ادارے کا نام درج نہیں تھا۔

سرینا عیسٰی نے خط کے متن میں لکھا کہ میں اور میری بیٹی انتہائی پریشان ہوئے کہ دو افراد گھر میں گھس آئے اور باز پرس کی، ہراساں کرنے کے بعد دونوں افراد یہ کہہ کر چلے گئے کہ دو دن بعد فارم لینے آئیں گے۔

خط میں کہا گیا ہے کہ کچھ دیر بعد دو افراد آئے اور اپنا تعارف وزارت داخلہ کے اہلکاروں کے طور پر کروایا، جبکہ ان دونوں نے بھی اہل خانہ کے بارے میں سوالات کرنے شروع کردیے۔

سرینا عیسیٰ نے اپنے خط میں لکھا کہ انہوں نے کہا کہ دوبارہ آئیں گے، بہتر ہے معلومات فراہم کردیں یا نتائج بھگتنے کو تیار ہوجائیں۔

جسٹس قاضی عیسیٰ کی اہلیہ سرینا عیسیٰ نے تین صفحات پر مبنی خط میں وفاقی اور صوبائی حکومتوں سے انکوائری کا مطالبہ کیا ہے۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published.