Categories
Breaking news

سال 2020 میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ردوبدل، 13 روپے کمی ہوئی

Advertisement

پٹرول پمپ

سال 2020 میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ردوبدل کے باوجود سال کے آخر میں شروع کے مقابلے میں قیمیتوں میں 13 روپے کمی ہوئی ہے۔

2020 کے دوران پیٹرولیم مصنوعات کی سب سے کم قیمتیں کورونا کے پہلے فیز کے بعد جون میں ہوئی جب حکومت کی جانب سے پیٹرول کے قیمت 74 روپے ، ڈیزل کی قیمت 80.15 روپے تک رکھی گئی لیکن قیمتیں کم ہونے پر عوام کو ریلف ملنے کی بجائے پیٹرول کا بحران پیدا ہو گیا بلکہ ملک میں عوام کو پیٹرول ملنا مشکل ہو گیا جس پر حکومت نے کارروائی کرتے ہوئے پچیس جون کو ہی پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں یکمشت پچیس روپے کا فوری اضافہ کر دیا اور پیٹرول کی قیمت 100.11روپے اور ڈیزل کی قیمت 101.46روپے مقرر کردی گئی۔

سال کے آغاز پر جنوری 2020 میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں زیادہ تھی۔ پیٹرول کی قیمت 116.60روپے اور ڈیزل کی قیمت 127.26روپے مقرر تھی جبکہ سال کے آخر میں سولہ دسمبر کو حکومت کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں پانچ روپے تک کا اضافہ کیا گیا جس کے بعد پیٹرول کی قیمت 103روپے69پیسہ فی لیٹر اور ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت 108روپے 44پیسہ فی لیٹر مقرر ہوگئی-

Advertisement

حکومت کی جانب سے جولائی میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں پندرہ روز بعد ردوبدل کرنے کا فیصلہ کیا گیا اور یکم نومبر سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں پندرہ روز کے لئے مقرر کرنا شروع کردی گئیں۔

عوام کا کہنا ہے کہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں عالمی مارکیٹ کے حساب سے کم نہیں کی گئی، جب عالمی مارکیٹ میں پیٹرول سستا ہوا تو یہاں مصنوعی بحران پیدا کر کے عوام کو اس کا فائدہ نہیں ہونے دیا گیا اور پھر ایک دم قیمتیں بڑھا دی گئیں جس سے عوام افادیت سے محروم رہی۔

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *