Categories
Breaking news

ریان برل کی ٹوئٹ کے بعد ’پوما‘ کا زمبابوین ٹیم کے جوتے اسپانسر کرنے کا اعلان

زمبابوین ٹیم

زمبابوے کے کرکٹر ریان بُرل کی جانب سے اپنے جوتے کو گلو سے جوڑنے اور اسپانسر نہ ہونے کا شکوہ کیے جانے کے بعد جوتوں کی مشہور کمپنی ’پوما‘ نے زمبابوے کی کرکٹ ٹیم کے جوتوں کو اسپانسر کرنے کا اعلان کردیا ہے۔

اس تمام سلسلے کا آغاز اس وقت ہواتھا جب زمبابوین کرکٹر ریان بُرل نے ٹوئٹ کیا تھا کہ جس میں لکھا تھا کہ کیا ہمیں جوتوں کے لیے کوئی اسپانسر مل سکتا ہے تاکہ ہمیں ہر سیریز کے بعد اپنے جوتوں کو گلو نہ لگانا پڑے۔

یہ پیغام بہت وائرل ہوا اور اس ٹوئٹ کا دنیا کی مشہور جوتوں کی کمپنی اور عالمی شہرت یافتہ برانڈ ’پوما‘ نے مثبت جواب دیتے ہوئے ناصرف ریان بُرل بلکہ پوری زمبابوین ٹیم کو اسپانسر کرنے کا فیصلہ کیا۔

Any chance we can get a sponsor so we don’t have to glue our shoes back after every series ? @newbalance @NewBalance_SA @NBCricket @ICAssociation pic.twitter.com/HH1hxzPC0m

— Ryan Burl (@ryanburl3) May 22, 2021

پوما نے کرکٹر کی ٹوئٹ پر انہیں جواب دیا کہ اب آپ کو اپنے جوتوں پر گلو لگانے کی ضرورت نہیں، ہم آپ کو اسپانسر کرتے ہیں۔

پوما کی اس ٹوئٹ پر خوشی اور جذبات کے ملے جلے تاثرات سے لبریز زمبابوین کرکٹر نے شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ وہ ’پوما کرکٹ ٹیم‘ کا حصہ بننے کے شدت سے منتظر ہیں۔

پیر کو پوما نے زمبابوے کی کٹ سے مماثلت رکھنے والے لال اور پیلے رنگ کے جوتے کے جوڑوں کی تصاویر شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ ریان بُرل اور ان کے ساتھیوں کے لیے خصوصی شپمنٹ، ہمیں امید ہے کہ رنگ ان کی جرسی سے میل کھائے گا۔

ریان بُرل نے مزید لکھا کہ میں پوما کرکٹ ٹیم جوائن کرنے پر فخر محسوس کرتا ہوں، یہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران شائقین کی سپورٹ اور مدد کی وجہ سے ممکن ہوا اور مداحوں کے ساتھ ساتھ پوما کا بھی شکریہ ادا کیا۔

دنیا بھر سے شائقین کرکٹ اور مشہور کھلاڑیوں نے جوتوں کی مشہور کمپنی کے اس جذبے کو سراہتے ہوئے انہیں خراج تحسین پیش کیا۔

سابق بھارتی کرکٹر اور 2011 ورلڈ کپ کے بہترین کھلاڑی کا اعزاز جیتنے والے یوراج سنگھ بھی اس فہرست میں شامل ہیں جنہوں نے پوما کے اس عمل کو سراہا۔

ایک اور سابق بھارتی کرکٹر ہربھجن سنگھ کے ساتھ ساتھ نوجوان آل راؤنڈر واشنگٹن اور لوکیش راہل نے بھی پوما کے جذبے کو قابل ستائش قرار دیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *