Categories
Breaking news

رانا تنویر کا حکومتی تبدیلی کے بعد عمران خان کے نئے عہدے کا تذکرہ

رانا تنویر کا حکومتی تبدیلی کے بعد عمران خان کے نئے عہدے کا تذکرہ

چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی (پی اے سی) رانا تنویر حسین نے حکومتی تبدیلی کے بعد عمران خان کے نئے عہدے کا تذکرہ کردیا۔

اسلام آباد میں گفتگو کے دوران رانا تنویر نے کہا کہ حکومت تبدیلی کے بعد عمران خان چیئرمین پی اے سی بننا چاہیں تو ہم تیار ہیں۔

صوبائی وزراء کی ترین گروپ سے ملاقات، یقین دہانی لیے بغیر مایوس لوٹ گئے

صوبائی وزراء نےجہانگیر ترین گروپ کے ارکان سے ملاقات کی لیکن کسی بھی یقین دہانی کے بغیر مایوس لوٹ گئے۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان کو چیئرمین پی اے سی بنے کا مشورہ نہیں بلکہ ان کا حق ہے، ہمیشہ سے یہی پریکٹس ہے، ان کی عادت نہیں کام کرنے کی۔

رانا تنویر نے مزید کہا کہ عمران خان کام کرتے تو آج اس حد تک نہ پہنچتے، عمران خان کی ٹریننگ اللہ ہی کرے، 3 سال تو ان کی ٹریننگ ہوئی نہیں۔

اُن کا کہنا تھاکہ ہماری کوشش ہے انتخابات جلد از جلد ہوں، فیصلہ متحدہ اپوزیشن کرے گی، انتخابی اصلاحات اور نیب میں بہتری لانا ہماری ترجیحات میں شامل ہے۔

خط کس نے لکھا؟ وزیراعظم نے بتادیا

وزیراعظم عمران خان نے صحافیوں سے ملاقات میں خط نہیں دکھایا صرف مندرجات سے آگاہ کیا ہے۔

چیئرمین پی اے سی نے یہ بھی کہا کہ بڑے میاں کی اجازت سے چوہدری پرویز الہٰی کو وزرات اعلیٰ کی آفر کی تھی۔

انہوں نے کہا کہ چیئرمین نیب کے لیے اللہ خیر کرے، وہ یکطرفہ چلے، چیئرمین نیب نے حکومت کے اسکینڈل کی طرف مڑ کر دیکھا بھی نہیں۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published.