Categories
Breaking news

راناشمیم کیس: 28 دسمبر کی سماعت کا تحریری حکم نامہ جاری

راناشمیم کیس: 28 دسمبر کی سماعت کا تحریری حکم نامہ جاری

اسلام آباد ہائیکورٹ نے گلگت بلتستان کی سپریم ایپلیٹ کورٹ کےسابق چیف جج راناشمیم کے بیانِ حلفی کی اشاعت پر توہین عدالت کیس میں 28 دسمبر کی سماعت کا 12صفحات پرمشتمل تحریری حکم نامہ جاری کر دیا۔

چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ جسٹس اطہر من اللّٰہ نے28دسمبرکی سماعت کا تحریری حکم نامہ جاری کر دیا جس میں تحریر ہے کہ عدالت مطمئن ہے کہ بادی النظرمیں یہ مبینہ مجرمانہ توہین کا کیس بنتا ہے۔

رانا شمیم توہین عدالت کیس: 7 جنوری کو فرد جرم عائد ہوگی

اسلام آباد ہائیکورٹ نے رانا شمیم توہین عدالت کیس میں 7 جنوری کو فرد جرم عائد کرنے کی تاریخ مقررکر دی،ریمارکس میں کہاکہ تمام ملزمان پر آئندہ سماعت پر فرد جرم عائد کی جائے گی۔

تحریری حکم نامہ میں کہا گیا کہ بادی النظر میں راناشمیم سمیت تمام فریقین مبینہ مجرمانہ توہین کےمرتکب ہوئے ہیں، رانا شمیم سمیت مبینہ توہین عدالت کےمرتکب افراد پر 7جنوری کو فرد جرم عائد کی جائےگی۔

حکم نامہ میں کہا گیا ہے کہ توہین عدالت کیس میں اٹارنی جنرل کو پراسیکیوٹر مقررکیا جاتا ہے، رپورٹ کیا گیا بیان حلفی کسی عدالتی کارروائی کا حصہ نہیں تھا، بادی النظر میں خبر چھاپتے ہوئے مناسب احتیاط نہیں برتی گئی۔

تحریری حکم نامے میں مزید کہا گیا کہ پروفیشنل صحافی نے رجسٹرار ہائی کورٹ سے حقائق کی تصدیق کی کوشش نہیں کی، انصار عباسی، عامر غوری نے دوران سماعت جو موقف لیا اس کی توقع نہیں تھی۔

حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ انصار عباسی اور عامر غوری نے کہا کہ مفاد عامہ میں خبرچھاپی گئی، ایسا لگا انصار عباسی اور عامر غوری بھی بیان حلفی کا متن درست سمجھتے ہیں۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published.