Categories
Breaking news

“دفتر خارجہ نے وزیر اعظم کی کوششوں کو ناکام بنایا، اگر یہ اپنا کام کرتے تو کشمیر ۔۔۔ ” شیریں مزاری نے کشمیر پالیسی پر سوال اٹھادیے

Advertisement

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق ڈاکٹر شیریں مزاری نے کشمیر کے مسئلے پر دفتر خارجہ کی کارکردگی پر سوالیہ نشان لگادیا۔

Advertisement
Advertisement
www.idgod.ph

کشمیر سے متعلق فن پاروں کی نمائش کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق شیریں مزاری نے مسئلہ کشمیر پر دفتر خارجہ کے کردار پر سوالات اٹھادیے۔

انہوں نے کہا کہ دفتر خارجہ نے کشمیر پر وزیر اعظم عمران خان کی کوششوں کو ناکام بنایا۔ وزیر اعظم نے اکیلے ہی کشمیر پر پورا بیانیہ بدلا، انہوں نے بیانات دیے اور ٹویٹس کیں ، اگر ہمارا دفتر خارجہ کشمیر کی پالیسی کو آگے لے کر چلتا تو حالات اور طرح ہوتے اور دنیا نوٹس لے چکی ہوتی۔

وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کا بغیر پروٹوکول لاہور کے مختلف علاقوں کا دورہ،صفائی کے ناقص انتظامات پراظہار برہمی

شیریں مزاری نے کہا کہ کشمیر کے معاملے پر ہم تو اتنے خوفزدہ ہوگئے ہیں کہ اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل میں ہم کوشش ہی نہیں کر رہے کہ کشمیر کی رپورٹس پر انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر کمیٹی بنائی جاسکے۔

انہوں نے کہا کہ کشمیریوں کی جدوجہد انصاف پر مبنی ہے، بھارتی افواج کشمیری خواتین کی بے حرمتی کو ہتھیار کے طور پر استعمال کررہی ہے، پرانی اور روایتی طریقے کی سفارتکاری ختم ہونی چاہیے، صرف سفارتی بیانات دینے سے کچھ نہیں ہوگا، نئے طریقے اپنانا ہوں گے، نوجوان کشمیر کے مسئلے کو آگے لے کر چلیں۔

اکیلا رہنے کی خواہش، بھائی نے آئسکریم میں بہن کو زہر کھلا دیا

مزید :

Breaking Newsاہم خبریںقومی

Original Article

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *