Categories
Breaking news

خاتون صحافی کو دھمکانے پر وائٹ ہاؤس کے ڈپٹی پریس سیکرٹری سے استعفیٰ لے لیا گیا

Advertisement
Advertisement

خاتون صحافی کو دھمکانے پر وائٹ ہاؤس کے ڈپٹی پریس سیکرٹری سے استعفیٰ لے لیا گیا

وائٹ ہاؤس کے ڈپٹی پریس سیکرٹری ٹی جے ڈکلو نے خاتون صحافی کو دھمکانے کا الزام ثابت ہونے پر اپنے عہدے سے استعفیٰ دیدیا۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق وائٹ ہاؤس کے ڈپٹی پریس سیکرٹری ٹی جے ڈکلو کے خاتون سیاسی رپورٹر کے ساتھ خصوصی تعلقات تھے جس پر ایک اور خاتون رپورٹر نے اسٹوری کرنا چاہی تو ٹی جے ڈکلو نے ان خاتون صحافی کو ڈرایا دھمکایا۔

خاتون کو خوف زدہ کرنے اور ناروا سلوک کی رپورٹ ایک مقامی میگزین میں شائع ہوئی جس پر وائٹ ہاؤس کے ڈپٹی سیکرٹری کو ایک ہفتے کے لیے بغیر تنخواہ کے معطل کر دیا گیا تھا تاہم جوبائیڈن انتظامیہ پر اس ’’ناکافی اقدام‘‘ پر سخت تنقید ہوئی۔

اگلے ہی روز ٹی جے ڈکلو نے اپنے رویے پر معذرت کرتے ہوئے کہا کہ میں نے گستاخانہ، قابل نفرت اور ناقابل قبول زبان استعمال کی تھی، صدر جوبائیڈن اور اپنے ساتھیوں کے لیے شرمندگی اور مایوسی کی وجہ بننے پر افسوس اور شدید دکھ ہے۔

ٹی جے ڈکلو نے مزید کہا کہ میں نے ایسی زبان استعمال کی جس کا کسی بھی صحافیانہ فرائض انجام دینے والی خاتوں صحافی کو سامنا نہیں کرنا چاہیئے۔

تاہم ڈپٹی پریس سیکرٹری کی معذرت قبول نہیں کی اور انہیں صدر جوبائیڈن کے افتتاحی تقریب میں کہے گئے واضح پیغام کہ انتظامیہ کے کسی بھی عہدے دار نے اگر کسی سے گستاخانہ رویہ اختیار کیا تو انہیں موقع پر ہی انتظامیہ سے فارغ کر دیا جائے گا کے تحت مستعفی ہونا پڑا۔

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *