Categories
Breaking news

حکومت تعاون کیلئے تیار ہے، انتخاب کرنا الیکشن کمیشن کی ذمہ داری ہے، شبلی فراز

وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی شبلی فراز نے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کے ساتھ حکومت اور وزارتِ سائنس تعاون کرنے کے لیے تیار ہے، اب ذمے داری الیکشن کمیشن کی ہے کہ وہ کس کا انتخاب کرتا ہے۔

اسلام آباد میں نیوز کانفرنس کرتے ہوئے شبلی فراز کا کہنا تھا کہ پارلیمنٹ میں کل کا دن جمہوری تاریخ کا روش دن تھا، حکومت نے تبدیلی کا نعرہ پورا کر کے دکھایا ہے۔

شبلی فراز کا کہنا تھا کہ اپوزیشن نی ای وی ایم کو بغیر سمجھے اس کی مخالفت کی، حکومت نے اپنی سرپرستی میں ای وی ایم بنائی۔

ووٹنگ مشین کا استعمال نیوٹرل امپائر جیسا ہے، وزیر اعظم عمران خان

وزیر اعظم نے کہا کہ اوور سیزپاکستانیوں کو ووٹ کا حق دے کر پاکستان کی جمہوریت میں شامل کرلیا ہے، اب جو بھی حکومت آئے گی وہ سمندر پار پاکستانیوں کی قدر کرے گی۔

ان کا کہنا تھا کہ انتخابی اصلاحات میں اپوزیشن کو شامل کرنے کی بھرپور کوشش کی، پارلیمنٹ اور صوبائی اسمبلیوں میں ای وی ایم پر ڈیمو دے چکے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ جمہوریت کو جڑیں پکڑنی ہیں تو جمہوری عمل کو درست کرنا ہوگا، عمران خان جیسا لیڈر ہی نڈر اور بے باک ہوسکتا ہے۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نے فیصلہ کیا کہ ٹیکنالوجی کو راستہ دیا جائے، ہم نے اپنی سرپرستی میں مشین بنائی۔

کل حکومت بری طرح ناکام ہوئی: رانا ثناء اللّٰہ

مسلم لیگ نون کے رہنما رانا ثناء اللّٰہ کا کہنا ہے کہ کل حکومت کامیاب نہیں ہوئی بلکہ بری طرح ناکام ہوئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ماضی میں جو انتخابات میں دھاندلی کی جاتی تھی اس کا سدِباب کریں گے۔

شبلی فراز کا کہنا تھا کہ اپوزیشن نے ووٹنگ مشین کی مخالفت برائے مخالفت کی، ہم نے اپوزیشن کو شامل کرنے کی بھرپور کوشش کی۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ الیکشن کمیشن کے ساتھ حکومت اور وزارت سائنس تعاون کرنے کے لیے تیار ہے، اب ذمے داری الیکشن کمیشن کی ہے کہ وہ کس کا انتخاب کرتا ہے۔

سمندر پار پاکستانیوں کی سہولت کیلیے ڈیجیٹل پورٹل کا آغاز

وزیراعظم نے کہا کہ ایف بی آر کے اندر سے لوگ آٹومیشن نہیں آنے دیتے ،بیرون ملک مقیم 90 لاکھ پاکستانی ووٹنگ میں حصہ لے سکیں گے،پاکستان میں پہلی بار ٹریس اینڈ ٹریک سسٹم لارہے ہیں۔

شبلی فراز نے بتایا کہ جو مشین ہم نے الیکشن کمیشن کو دکھائی وہ ایک مثال تھی، ہم نے مشین ای سی پی کی ضروریات کے مطابق بنائی تھی۔

ان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن کے پاس ابھی بھی موقع ہے کہ الیکشن کمیشن جائے اور اپنے تحفظات کا اظہار کرے۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے قانون سازی کرلی اور وزارتِ سائنس نے مشین بنالی، اب باقی کام الیکشن کمیشن کا ہے، ہر چیز اب واضح ہوگئی ہے، ہم سیاسی عمل کو ٹیکنالوجی اور نئے دور کی طرف لے گئے ہیں۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published.