Categories
Breaking news

حمزہ شہباز روکے جانے پر پنجاب اسمبلی کی سیکیورٹی پر برہم

حمزہ شہباز روکے جانے پر پنجاب اسمبلی کی سیکیورٹی پر برہم

پنجاب کے وزیر اعلیٰ کے لیے نامزد امیدوار مسلم لیگ ن کے رہنما حمزہ شہباز کو اسمبلی آمد پر روکا گیا تو انہوں نے سیکیورٹی اہلکار سے مخاطب ہوتے ہوئے کہا ہے کہ تم حکومت کے ملازم ہو کسی کے ذاتی ملازم نہیں۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ خدا کا خوف کرو آئینی ذمہ داری پورے کرنے جارہے ہیں۔

یاد رہے کہ پنجاب اسمبلی کا اجلاس آج ہونے جا رہا ہے جس کا ون پوائنٹ ایجنڈا وزیراعلیٰ کا انتخاب ہے۔

حمزہ شہباز اور چوہدری پرویز الہٰی وزارتِ اعلیٰ کے لیے امیدوار ہیں۔

پنجاب اسمبلی کا ون پوائنٹ ایجنڈا، وزیرِ اعلیٰ کا انتخاب

پنجاب اسمبلی کا اجلاس آج 11 بجے دن ہونے جا رہا ہے جس کا ون پوائنٹ ایجنڈا وزیرِ اعلیٰ کا انتخاب ہے۔

اسمبلی آمد پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہمیں اکثریت حاصل ہے، آج دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو جائے گا۔

ایک صحافی نے حمزہ شہباز سے سوال کیا کہ اگر استعفے آ جاتے ہیں تو پھر کیا کریں گے؟

حمزہ شہباز نے جواب دیا کہ استعفیٰ صرف ایک آئے گا اور وہ عمران نیازی کا ہو گا، یہ لوگ مگر مچھ کے آنسو بہانا چاہتے ہیں۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *