Categories
Breaking news

حساس ادارے کے ملازم کا مراعات حاصل کیلئے اپنے قتل کا ڈرامہ

Advertisement
حساس ادارے کے ملازم کا مراعات حاصل کیلئے اپنے قتل کا ڈرامہ

فیصل آباد میں حساس ادارے کے ملازم کا وفات کے بعد ملنے والے واجبات اور مراعات حاصل کرنے کیلئے اپنے قتل کا رچایا گیا ڈرامہ بے نقاب ہو گیا ، واقعہ کو حقیقت کا رنگ دینے کیلئے نامعلوم شخص کو قتل کر کے لاش کو جلانے کے واقعہ کا بھی ڈراپ سین ہو گیا۔

پولیس کے مطابق چک جھمرہ کے علاقہ میں 2 دسمبر کو قتل کے بعد حساس ادارے کے ملازم منصب کی لاش کو جلا کر ناقابل شناخت بنانے کا واقعہ سامنے آیا تھا ، تفتیش کیلئے مقتول کے موبائل فون کا ریکارڈ نکلوایا تو واقعہ کے تین روز بعد مقتول کے نام پر نئی سم ایکٹو ہونے کا انکشاف ہوا۔

Table of Contents

x
Advertisement

جب موبائل فون سم کی لوکیشن کو ٹریس کر کے پولیس نے ایک گھر پر چھاپہ مارا تو منصب زندہ مل گیا۔

یہ بھی پڑھیے

پولیس ذرائع کے مطابق ملزم منصب نے پہلی بیوی کو طلاق دے کر کچھ عرصہ قبل دوسری شادی کی تھی اور اس نے وفات کے بعد ملنے والی سرکاری واجبات اور مراعات حاصل کر نے کیلئے اس نے بیوی کے ساتھ مل کر اپنے قتل کا ڈرامہ رچایا۔

اس مقصد کیلئے ملزم منصب چند روز قبل چھٹی لے کرگھر آیا اور جنرل بس اسٹینڈ سے نشے کے عادی نامعلوم شخص کو ویران جگہ ساتھ لے جا کر چھری کے وار کر کے قتل کیا اور لاش کو ناقابل شناخت بنانے کیلئے پٹرول چھڑک کر جلا دیا۔

ملزم نے اعتراف کیا کہ واقعے کو اپنے قتل کا رنگ دینے کیلئے اپنی وردی ، شناختی کارڈ کی کاپی اور جوتے لاش کے پاس چھوڑدئیے ۔

پولیس نے تھانہ فیڈمک میں ملزم منصب کے قتل کا مقدمہ بھی نامعلوم افراد کے خلاف درج کرلیا تھا۔

پولیس کے مطابق ملزم کے ہاتھوں قتل ہونے والے شخص کی شناخت نہیں ہو سکی اور اس کے ورثاء کی تلاش کیلیے مزید تحقیقات جاری ہیں۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *