Categories
Breaking news

جینوسائیڈ واچ کے سربراہ کا بیان ہمارے موقف کی تائید ہے، شاہ محمود

Advertisement
جینو سائیڈ واچ کے سربراہ کا بیان ہمارے موقف کی تائید ہے، شاہ محمود

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ جینوسائیڈ واچ کے سربراہ کا بیان ہمارے موقف کی تائید ہے۔

Advertisement

ایک بیان میں شاہ محمود قریشی نے کہا کہ بھارت میں 20 کروڑ مسلمانوں سے متعلق جینوسائیڈ واچ کے سربراہ کے بیان نے ہمارے موقف اور نکتہ نظر کی سچائی ثابت کردی ہے۔

Table of Contents

x
Advertisement

انہوں نے کہا کہ مسلمانوں کے ساتھ ناروا سلوک صرف مقبوضہ وادی تک محدود نہیں ہے۔

وزیر خارجہ نے مزید کہا کہ پاکستان نے بھارت کے دہشت گردی میں ملوث ہونے کے ثبوت دیے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ بھارت دہشت گردوں کی پشت پناہی، فنڈنگ اور اسلحہ فراہمی میں ملوث ہے، نہیں چاہیں گے بھارت پاکستان کے خلاف کسی پڑوسی ملک کی سرزمین استعمال کرے۔

شاہ محمود قریشی نے یہ بھی کہا کہ کابل میں افغان ہم منصب کے ساتھ ہونیوالی ملاقات میں بھی معاملہ اٹھایا۔

واشنگٹن میں انڈین امریکن مسلم کونسل کے زیر اہتمام نسل کشی اور بھارتی مسلمان کے موضوع پرہونے والے مباحثے میں عالمی ماہرین نے بھارت میں 20 کروڑ مسلمانوں کی نسل کشی کے خطرے کا اظہار کیا ہے۔

عالمی ماہرین نے کہا کہ بھارت میں مسلمانوں پر ظلم ان کی معاشی صورتحال کو بدتر کر رہا ہے۔

سربراہ جینوسائڈ واچ نے کہا کہ بھارت میں حقیقتاً مسلمانوں کی نسل کشی ہورہی ہے اور انسانیت کے خلاف منظم جرائم کا سلسلہ جاری ہے، کشمیر اور آسام میں مسلمانوں پر ظلم اُن کے قتل عام سے پہلے کا مرحلہ تھا، بابری مسجد کو گرانا اور مندر تعمیر کرنا اسی سلسلے کی کڑی ہے۔

سربراہ جینوسائڈ واچ کے مطابق دلی فسادات میں دلی پولیس نے سیکڑوں افراد کو حراست میں لیا اور اُن ہی زیرحراست افراد پر تشدد کا الزام لگادیا گیا۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *