Categories
Breaking news

جرمن سے سیاح آئیں گے یا نہیں؟ اسپین کی کوششیں تیز

میڈرڈ (محمد نبی) اسپین پٔرامید ہے کہ برطانیہ کی طرف سے لاگو سفری پابندیوں کے باوجود وہ جرمن کے سیاحوں کو ورغلانے میں کامیاب ہو جائے گا۔ اس مقصد کے لیے بڑی قومی سطح پر مہم چلائی جا رہی ہے۔ حکومت نے 8 ملین یوروز کی ایک ایسی ہی مہم کا آغاز کیا ہے جس کا مقصد جرمن کے سیاحوں کو اسپین کے سفر پر راغب کرنا ہے۔ ابھی تک یہ واضح نہیں ہوا کہ برطانیہ سفری قواعد و ضوابط کے حوالے سے بنائی گئی ‘amber’ لسٹ اپڈیٹ کرے گا یا نہیں۔

اسپین نے اپنی حالیہ سیاحتی مہم کا نام “آپ سپین کے مستحق ہیں” (Te mereces España) اس کا مقصد بڑے پیمانے پر جرمن کے نوجوانوں، خاندانوں اور سینیٹرز میں ہسپانوی ساحلوں، قدرتی مناظر، سپورٹ اور زمینی علاقوں کی تشہیر کرنا اور سیاحت کو فروغ دینا ہے۔یورپی یونین کے سیاح اب اسپین میں منفی antigen test کے ساتھ داخل ہو سکتے ہیں۔ PCR جو جرمنی میں 100 یوروز میں پڑتی ہے، کی ضرورت اب نہیں رہی۔

خیال رہے کہ جرمن کے سیاحوں کے لیے مہم ایک ایسے وقت میں سامنے آئی ہے جب یوکے نے تمام یورپی یونین کے ممالک جن میں اسپین بھی شامل ہے، کو اپنی “ایمبر لسٹ” میں رکھنے کا فیصلہ کیا ہوا ہے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ یوکے سے مسافر اسپین آسکتے ہیں مگر ان کو واپسی پر 10 دن قرنطینہ سے گزرنا پڑے گا۔ علاؤہ ازیں انہیں 2 ٹیسٹس بھی کروانے پڑتے ہیں جو قرنطینہ ختم ہونے سے پہلے منفی آنے لازم ہیں۔ ان اقدامات سے اسپین کی ٹورزم انڈسٹری کو بڑا دھچکا لگا تھا۔ اسے امید تھی کہ نئے اقدامات نرم اور لچک دار ہوں گے۔ خاص کر انہیں سیاحتی مشہور مقامات جن میں کینری اور بلیرئک جزیرے شامل ہیں، کے حوالے سے نرم پالسیوں کی توقع تھی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *