Categories
Breaking news

جامعہ کراچی نے 26 دن پہلے خط میں سیکیورٹی پر تحفظات ظاہر کیے تھے

جامعہ کراچی نے 26 دن پہلے خط میں سیکیورٹی پر تحفظات ظاہر کیے تھے

جامعہ کراچی نے کئی روز پہلے ہی غیر ملکی ٹیچرز کی سیکیورٹی سے متعلق تحفظات کا اظہار کیا تھا۔

جامعہ کراچی کے سیکیورٹی ایڈوائزر نے 26 دن پہلے چینی انسٹیٹیوٹ کو اس حوالے سے خط لکھا تھا۔

خاتون خودکش حملہ آور جامعہ کراچی کیسے پہنچی؟

تفتیشی حکام نے کہا ہے کہ خود کش حملہ آور خاتون نے جامعہ کراچی میں آنے کے لیے ممکنہ طور پر رکشے کا استعمال کیا ہے۔

کراچی یونیورسٹی سیکیورٹی ایڈوائزر کے خط میں کہا گیا تھا کہ غیر ملکی ٹیچرز فارن فیکلٹی سے سیکیورٹی کے بغیر آتے ہیں۔

جامعہ کراچی کے خط میں کہا گیا کہ غیرملکی ٹیچرز کے ہمراہ رینجرز یا پولیس کی نفری نہیں ہوتی، اگر کوئی واقعہ پیش آیا تو جامعہ کراچی ذمہ دار نہیں ہوگی۔

آج کراچی یونیورسٹی کے کنفیوشس انسٹیٹیوٹ کے گیٹ پر خاتون خود کش حملہ آور نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔

کراچی یونیورسٹی خودکش دھماکا، علیحدگی پسند تنظیم نے ذمے داری قبول کرلی، راجا عمر خطاب

انچار ج کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ (سی ٹی ڈی) راجا عمر خطاب نے کہا ہے کہ کراچی یونیورسٹی خود دھماکے کی ذمے داری علیحدگی پسند تنظیم نے بھی قبول کی ہے۔

واقعے میں 3 چینی باشندوں سمیت 4 افراد ہلاک ہوئے جبکہ ایک غیر ملکی سمیت 3 زخمی ہوئے ہیں۔

دھماکے کی سی سی ٹی وی ویڈیو سامنے آئی ہے،وڈیو میں خاتون کو وین کا انتظار کرتے اور پھر لیور دبا کر دھماکا کرتے دیکھا جاسکتا ہے، دھماکا ہوتے ہی وین کو شعلوں نے لپیٹ میں لے لیا،وین کے ساتھ چلنے والے رینجرز کی موٹر ساَئیکل بھی دھماکے کی زد میں آگئی۔

انچارج سی ٹی ڈی راجا عمر خطاب نے بتایا کہ باقاعدہ ریکی کرکے وین کو نشانہ بنایا گیا، بم ڈسپوزل اسکواڈ کے مطابق دھماکے میں 3 سے 4 کلو دھماکا خیز مواد اور بال بیرنگز استعمال کیے گئے۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published.